پاکستان کو گندھارا ثقافت کا محافظ ہونے پر فخر ہے،سینیٹر پرویز رشید

پاکستان کو گندھارا ثقافت کا محافظ ہونے پر فخر ہے،سینیٹر پرویز رشید

اسلام آباد(نمائندہ خصوصی) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات و قومی ورثہ سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ دنیا میں پرامن بقائے باہمی اور ہم آہنگی ایک دوسرے کی ثقافتوں کو سمجھنے سے حاصل کی جا سکتی ہے۔ جمعہ کو یہاں گندھارا اورکوریائی بدھ ثقافت سے متعلق سیمینار میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب ہم ایک دوسرے کی ثقافتوں اور مسائل سے آگاہ ہوں گے تو تب ہی عالمگیریت سے ایک دوسرے کو سمجھ سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوامی سطح پر روابط اور وفود کے متواتر تبادلوں سے تعاون کو فروغ دیتے ہوئے ایک دوسرے کی ثقافت کو مضبوط بنایا جا سکتا ہے اور اپنی اپنی ثقافتوں کی نمائندگی سے رکاوٹوں کو دور کرنے اور انسانیت کو مزید مضبوط بنانے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ گندھارا ثقافتوں، مذہبی اور تجارتی سرگرمیوں کا مرکز ہے اور دنیا کے تمام بڑے مذاہب یہاں انتہائی پرامن اور ہم آہنگی کے انداز میں ایک ساتھ رہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو گندھارا ثقافت کا محافظ ہونے پر فخر ہے جس کے خطے اور کوریا جیسی دور دراز سرزمین پر بھی اثرات ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان دنیا میں رہنے والے 35 کروڑ بدھ مذہب کے لوگوں کیلئے مذہبی سیاحت کی بڑی صلاحیت رکھتا ہے۔ حکومت پاکستان نے بدھ یادگاروں، ان کے مقامات اور مقدس اثرات کا تحفظ کیا جو بھرپور بدھ ورثہ کی نمائندگی کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے پاکستان میں ان مقدس مقامات کے دورے کیلئے سیاحوں کا ہمیشہ خیر مقدم کیا اور ان کی سہولت کیلئے درکار تمام کوششیں جاری رکھے گی۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ پاکستان اور کوریا کے سفارتی تعلقات صرف 30 سال پرانے ہیں تاہم دونوں ممالک کے درمیان روابط چوتھی صدی سے ہزاروں سال پرانے ہیں جب ایک معروف بدھ مذہبی رہنما مارانانتھا ٹیکسلا کا دورہ کیا اور بدھ تہذیب متعارف کرانے کیلئے کوریا گیا۔ وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ معروف کوریائی پیشوا بیچو نے آٹھویں صدی میں گندھارا کا سفر کیا اور ایک سفر نامہ تحریر کیا۔ انہوں نے کہا کہ گندھارا تہذیب پاکستانیوں اور کوریائی لوگوں کے درمیان مشترکہ ثقافتی، تاریخی اور پہلا رابطہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کوریائی تہذیب بدھ مذہب پر مبنی ہے اور کوریائی ماہایانہ بدھ ثقافت گندھارا سے آئی اس لئے ثقافتی لحاظ سے کوریا کا پاکستان کے ساتھ قدرتی رشتہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ گندھارا کا علاقہ ٹیکسلا پشاور اور وادی سوات پر مشتمل ہے جو ثقافتی ورثہ سے بھرپور ہے اور یہاں بدھ مذہب کے آثار کی زمین ہے۔ تخت بھائی بدھوں کے انتہائی اہم راہبوں کی جگہ رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزارت اطلاعات و نشریات و قومی ورثہ مقامات کے تحفظ، مذہبی سیاحت کے فروغ اور پاکستان کے بہتر تشخص کو اجاگر کرنے کیلئے گندھارا آرٹ اینڈ کلچر ایسوسی ایشن کے ساتھ قریبی طور پر کام کرے گی۔ سیمینار سے کوریا اور جرمنی کے سفیروں نے بھی خطاب کیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...