روس کی فضائی کارروائی کے خدشے کے پیش نظر داعش نے بیشتر مقامات پر جمعہ کی نماز نہیں پڑھی: رپورٹ

روس کی فضائی کارروائی کے خدشے کے پیش نظر داعش نے بیشتر مقامات پر جمعہ کی نماز ...
روس کی فضائی کارروائی کے خدشے کے پیش نظر داعش نے بیشتر مقامات پر جمعہ کی نماز نہیں پڑھی: رپورٹ

  

ماسکو،نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) سرگرم کارکن نے کہاہے کہ داعش نے شمالی شام میں اپنے دارلحکومت رقہ کی بیشتر مساجد میں روسی طیاروں کے فضائی حملوں کے خطرے کی وجہ سے جمعہ کی نماز ادانہیں کی ۔

بھارتی اخبار’ٹائمزآف انڈیا‘ نے شام میں انسانی حقوق پر نظررکھنے والی تنظیم کے حوالے سے بتایاکہ رقہ میں داعش کے کیمپ پر ڈرون طیارے نے حملہ کیاتاہم ہلاکتوں کے بارے میں معلوم نہیں ہوسکا، کئی مساجد فضائی حملوں کے خدشے کے پیش نظر خالی کردی گئیں اور جمعہ کی نماز کے اجتماعات بھی نہیں ہوئے ۔آبزرویٹری کاکہناتھاکہ جمعرات کو رقعہ میں ہونیوالے حملوں میں ایک تیونسی اور ایک عراقی شہری سمیت 12انتہاءپسندمارے گئے تاہم یہ واضح نہیں ہوسکاکہ حملے امریکی اتحاد نے کیے یا پھر روسی جنگی طیاروں نے نشانہ بنایا۔رپورٹ کے مطابق شام کے کارکنان کاکہناتھاکہ قوی امکان ہے کہ اگست میں داعش کی طرف سے قبضہ کیے گئے علاقے ’قریاتین‘ میں روسی طیاروں نے ہی حملہ کیا۔

روسی وزارت دفاع کے ترجمان کے حوالے سے بتایاکہ حلب کے قریب علاقائی کمانڈپوسٹ اور ادل میں فیلڈ کیمپ کو نشانہ بنایاجس میں بنکرز اور ہتھیاروں کا ذخیرہ تباہ ہوگیا۔ ادلب میں عارضی گودم اور اسلحہ کا ذخیرہ بھی تباہ ہوگیا۔ ہمہ میں طیارے نے کمانڈپوسٹ اور درجنوں بھاری ہتھیاربھی نشانہ بنے ۔

مزید : بین الاقوامی