دہلی کے شاہی امام کے صاحبزادے کا ہندولڑکی سے شادی کا فیصلہ

دہلی کے شاہی امام کے صاحبزادے کا ہندولڑکی سے شادی کا فیصلہ

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) دہلی کی جامع مسجد کے شاہی امام کے صاحبزادے شعبان بخاری کی شادی کا فیصلہ غازی آباد کی ہندولڑکی سے کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے،دونوں کا ایک عرصے سے تعلق تھا۔

خبررساں ایجنسی کے مطابق اس سے پہلے شاہی امام شادی کے خلاف تھے لیکن لڑکی کی طرف سے اسلام کی پیروی کرنے پر اتفاق ہونے کے بعدراضی ہوگئے ہیں اور لڑکی قرآن مجید کی تلاوت کررہی ہے ۔

لڑکی کا نام سامنے نہیں آسکاتاہم شادی کی تیاریاں شروع کردی ہیں جو 13نومبر کو طے پائی ہے اور دعوت ولیمہ 15نومبر کوہوگی اور اس ضمن میں ماہی پالپور میں ایک فارم ہاﺅس بک ہوچکاہے ۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکرہے کہ شاہی امام اپنے صاحبزادے شعبان کو گزشتہ سال نومبر میں جامع مسجد میں ہونیوالی ایک تقریب میں اپنا جانشین اور نبی امام مقررکرچکے ہیں ، مسجد جہاں نماکو جامع مسجد دہلی کے نام سے پکاراجاتاہے اور اس کا شمار بھارت کی بڑی مساجد میں ہوتاہے ۔

اس خبر کے سامنے آنے کے بعد ایک نئی بحث شروع ہوگئی ہے کہ بھار ت میں ہندﺅوں نے مسلمانوں کا جینا دوبھر کررکھاہے لیکن شاہی امام کا خاندان ایک ہندولڑکی کو اپنی بہو بنانے پر تلا ہے تو دوسری طرف دفاع کرنیوالے لوگوں کا خیال ہے کہ لڑکی اگر ہندومذہب سے اسلام کی پیروی کرناچاہتی ہے تو اسے اپنا نے میں کوئی مضائقہ نہیں ۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...