انٹرنیٹ پر فحش ویب سائٹس دیکھنے والوں کے حیران کن اعداد و شمار سامنے آ گئے

انٹرنیٹ پر فحش ویب سائٹس دیکھنے والوں کے حیران کن اعداد و شمار سامنے آ گئے
انٹرنیٹ پر فحش ویب سائٹس دیکھنے والوں کے حیران کن اعداد و شمار سامنے آ گئے

  

نیو یارک (نیوز ڈیسک) سائنس کی ترقی کے ساتھ انسان کوجدید ٹیکنالوجی کی سہولت تو دستیاب ہو گئی لیکن یوں محسوس ہوتا ہے کہ ہر گزرتے دن کے ساتھ ٹیکنالوجی کے مفید استعمال سے زیادہ اس کے منفی استعمال کا رجحان بڑھتا جا رہا ہے۔ کچھ ایسا ہی معاملہ موبائل فون کا بھی ہے کہ جسے ایجاد تو باہمی رابطے کے لئے کیا گیا تھا لیکن انٹرنیٹ کی سہولت دستیاب ہونے کے بعد اسے فحش بینی کے لئے بھی بکثرت استعمال کیا جا رہا ہے۔

نامعلوم کالرز کی معلومات دینے والی حیران کن ایپ اردومیں بھی دستیاب

ایک حالیہ تحقیق میں بتایا گیاہے کہ اب دنیا بھر کے موبائل فون صارفین نے اس ایجاد کو انٹرنیٹ پر فحش مواد دیکھنے کا سب سے بڑا زریعہ بنا لیا ہے۔ جہاں 2010 میں ایک بڑی فحش ویب سائٹ کو موبائل فون پر دیکھنے والوں کی تعداد صرف 12 فیصد تھی، وہیں اب یہ تعداد 63 فیصد تک جا پہنچی ہے۔

تحقیق کے مطابق اینڈرائڈ فون استعمال کرنے والے iOS فون استعمال کرنے والوں کی نسبت فحش ویب سائٹ پرزیادہ وقت گزارتے ہیں۔دونوں آپریٹنگ سسٹمز پر جن ناموں کی سب سے زیادہ تلاش کی گئی وہ لیزا این، میا خلیفہ اور کم کارڈاشین تھے۔

سعودی خواتین نے نئی تاریخ رقم کر دی لیکن تفصیلات جان کر آپ کو بالکل بھی خوشی نہیں ہو گی

یہ بھی بتایا گیا ہے کہ فحش مواد کی تلاش کرنے والے صارفین میں سے تقریباً 95 فیصد اینڈرائڈ یا iOS فون استعمال کر رہے ہیں۔ویب سائٹ کے ریکارڈ کے مطابق اسے وزٹ کرنے والے 64 صارفین iOS جبکہ31 فیصد اینڈرائڈ استعمال کر رہے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس