سموگ کیس، کمیشن کی سفارشات منظور، حکومت کو ضروری اقدامات کا حکم

سموگ کیس، کمیشن کی سفارشات منظور، حکومت کو ضروری اقدامات کا حکم

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس شاہد کریم نے سموگ کیس میں عدالتی ماحولیاتی کمیشن کی سفارشات منظور کرتے ہوئے پنجاب حکومت کو ضروری اقدامات کاحکم دے دیاسموگ اورماحولیاتی آلودگی پرقابو پانے کیلئے دائر درخواستوں کی سماعت کے موقع پر چیئرمین ماحولیاتی کمیشن جسٹس ریٹائرڈ علی اکبر قریشی کی طرف سے فوکل پرسن سید کمال حیدرنے مختلف سفارشات عدالت میں پیش کیں جوڈیشل کمیشن کی سفارش میں کہا گیا ہے کہ دھواں چھوڑ کرفضا کو خراب کرنے والی گاڑیوں کو پکڑکر3دن تک بند رکھاجائے لاہور میں تمام ماڈل روڈ پر چنگ چی رکشوں کو بند کیا جائے جبکہ دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کے لئے جرمانہ 200سے بڑھا کر2ہزار روپے کیا جائے فنانس ڈیپارٹمنٹ 6سال سے زیر التوا موٹر وہیکل بل جلد کابینہ میں پیش کرے عدالت میں سیف سٹی اتھارٹی سمیت دیگر متعلقہ اداروں کی طرف سے بھی رپورٹس پیش کردی گئیں جن میں کہا گیاہے کہ لاہور شہر میں 8509مقامات پر تجاوزات کی بھرمار ہے شہر 95مقامات پر مین ہولز او ر سڑکوں کی مرمت نہیں ہوسکی  5778مقامات پر ٹریفک ہر وقت پھنسی رہتی ہے  لاہور میں 46مقامات پر غیر منظور شدہ پارکنگ سٹینڈز ہیں،لاہور میں 26مقامات پر بھکاریوں کی بھرمار ہے،32سرکاری اور نجی اداروں کے پاس پارکنگ سٹینڈز کی جگہ نہیں،60مقامات پر سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں،لاہور میں 35مقامات پر ٹریفک سائن بورڈ موجود نہیں،عدالت نے آئندہ تاریخ سماعت پرعمل درآمد رپورٹ طلب کرلی۔

مزید :

علاقائی -