مال روڈ سمیت شہر بھر میں کوڑے کے ڈھیر، تعفن پھیلنے لگا: پنجاب اسمبلی مذمتی قرارداد جمع 

مال روڈ سمیت شہر بھر میں کوڑے کے ڈھیر، تعفن پھیلنے لگا: پنجاب اسمبلی مذمتی ...

  

 لاہور(جنرل رپورٹر)لاہور میں ایک بار پھر کوڑے کے ڈھیر لگ گئے، شہر میں تعفن پھیلنے لگا، اندازے کے مطابق سڑکوں پر 10 ہزار ٹن کوڑا موجود ہے۔تفصیل کے مطابق شاد مان، ایبٹ روڈ، لکشمی چوک، مال روڈ کے اطراف کوڑے کے ڈھیر لگ گئے۔ علاوہ ازیں چائنہ سکیم، شالامار باغ، گڑھی شاہو، انار کلی کے علاقوں میں بھی گندگی جمع ہو گئی۔ تنخواہیں نہ ملنے کے سبب البیراک کے ڈرائیورز، سپر وائزر اور سینٹری ورکرز ہڑتال پر ہیں جس کے باعث شہر میں کوڑے کے ڈھیر لگ گئے ہیں۔سی ای او ایل ڈبلیو ایم سی عمران سلطان نے شہر میں کوڑا جمع ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے ورکرز کو تنخواہیں ادا کر دیں، ہڑتال ختم کروا دی ہے۔ پانچ روز میں شہر کو زیرو ویسٹ کر دیا جائے گا۔دریں اثناء   لاہور شہرکچرا کنڈی میں تبدیل ہونے کیخلاف مسلم لیگ (ن) کی رکن اسمبلی سمیرا کومل کی جانب سے پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع کرا دی گئی،جس میں کہا گیا ہے کہ لاہور پھر کچڑا کنڈی میں تبدیل ہو گیاہے۔ کنٹریکٹرز کو عدم ادائیگی پر شہر میں صفائی آپریشن رک گیا۔سینٹری ورکرز کو تنخواہیں نہ ملنے سے آدھے شہر میں ساڑھے 4 ہزار کنٹینرز کوڑے سے بھرے ہیں۔کچرے سے شہر میں تعفن پھیلا رہا ہے  یہ ایوان حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ لاہور شہر کی خوبصورتی کوبرقرار رکھنے کیلئے فوری صفائی آپریشن شروع کیا جائے۔

سینٹری ورکرز کی تنخواہیں اور کنٹریکٹر کی ادائیگی یقینی بنائی جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -