ہسپتالوں کی معائنہ فیس میں اضافہ ظلم ہے،ذکر اللہ مجاہد

ہسپتالوں کی معائنہ فیس میں اضافہ ظلم ہے،ذکر اللہ مجاہد

  

لاہور(پ ر) امیر جماعت اسلامی لاہور میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ سرکاری ہسپتالوں میں آؤٹ ڈور چیک اپ کی فیس میں اضافہ بدترین گورننس کا ثبوت ہے۔ حکمرانوں نے مفت پرچی کو 50 روپے اور تشخصی ٹیسٹوں کی فیس میں 200 روپے کا اضافہ کرکے غریب عوام اور مریضوں پر تبدیلی کا بم برسایا ہے جس کی پوری قوم مذمت کرتی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سرکاری ہسپتالوں چیک اپ اور ٹیسٹوں کی فیس میں ہوشربا اضافے پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا۔میاں ذکر اللہ مجاہد نے کہا کہ سرکاری ہسپتالوں میں علاج معالجہ کی سہولیات کا فقدان حکمرانوں کی ناکامی ہے۔ صوبائی دارالحکومت کے سرکاری ہسپتالوں میں ایک بیڈ پر تین تین مریض علاج کروانے پر مجبور ہیں جبکہ ہسپتالوں میں ادویات سمیت دیگر سہولیات طبی سہولیات کی عدم فراہمی سے ڈاکٹرز اور مریضوں کی پریشانی مزید بڑھ چکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ  غریب عوام اگر سرکاری ہسپتالوں میں پیسے دیکر ہی علاج کروائے گی تو حکمرانوں کو اقتدار میں رہنے کا کوئی حق نہیں۔ نااہل اور نالائق حکومت نے عوام سے جینے کا حق تک چھین لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف حکمران غریبوں کی فلاح و بہبود اور ریلیف فراہم کرنے کے حوالے سے بڑے بڑے دعوے اور نعروں سے قوم کو بیوقوف بنا رہے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -