خاتون سمیت 4افراد قتل، حادثات میں 5جاں بحق 

خاتون سمیت 4افراد قتل، حادثات میں 5جاں بحق 

  

  گگو منڈی‘ رحیم یار خان‘ بنگلہ منٹھار‘ کوٹ ادو‘ وہاڑی‘ ماچھیوال‘ کچا کھوہ (بیورو رپورٹ‘ نامہ نگار‘ نمائندہ پاکستان‘ تحصیل رپورٹر) خاتون سمیت 4 افراد کو قتل کردیا گیا‘ حادثات میں 5 افراد جاں بحق ہوگئے‘ 23 سالہ خاتون نے موت گلے لگا لی۔ تفصیل کے مطابقنواحی گاؤں 291۔ای بی کے رہائشی سلطان رحمانی نے چک نمبر273۔ای بی میں جنرل سٹور بنایا ہوا تھا گزشتہ شام وہ اپنی دکان کے سامنے کھڑا تھا کہ اسی دوران اس کا(بقیہ نمبر13صفحہ 6پر)

 بھتیجا حیدر عرف عباس چھجری سے مسلح ہو کر آ گیا اور چھری کے پے در پے وار کر کے سلطان کو شدید زخمی کر دیا مضروب کو ہسپتال لے جایا رہا تھا کہ اس نے راستہ میں دم توڑ دیا پولیس نے لاش کو ہسپتال منتقل کر دیا ملزم فرار۔  تھانہ ایئر پورٹ کی حدودچک 125پی میں سوشل میڈیا پر کمنٹس کرنے سے شروع ہونے والی لڑائی پر ہونے والی پنچائیت میں دونوں فریقین کے دوران تلخ کلامی ہوگئی جس پر ملزمان ارباب اور بابر نے پنچائیت کیلئے آئے دوسرے فریق محمد حماد‘عدنان اور عثمان پر فائرنگ کردی‘فائرنگ کے نتیجہ میں محمد حماد گولی لگنے سے موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا جبکہ محمد عدنان اور عثمان فائرنگ سے شدید زخمی ہوگئے۔واقعہ کی اطلاع ملتے ہی تھانہ ایئر پورٹ پولیس موقع پر پہنچ گئی‘مقامی افراد نے پولیس کی موجودگی میں زخمیوں کو طبی امداد کیلئے شیخ زاید ہسپتال منتقل کیا جبکہ پولیس نے لاش تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کیلئے شیخ زاید ہسپتال مارچری میں منتقل کردی‘ملزمان کی فائرنگ سے زخمی ہونے والے محمد عثمان اور عدنان کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے جنہیں شیخ زاید ہسپتال میں طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہے‘تھانہ ایئر پورٹ پولیس کے مطابق لڑائی سوشل میڈیا پر لگائی جانے والی ایک پوسٹ پر کمنٹس کرنے سے شروع ہوئی جس پر چک 125پی میں پنچائیت تھی‘پنچائیت پر ملزمان بابر اور ارباب نے فائرنگ کی جس کے نتیجہ میں محمد حماد گولی لگنے سے موقع پر جاں بحق جبکہ دو افراد زخمی ہوئے ہیں۔عینی شاہدین کے بیان پر پولیس نے کارروائی شروع کردی ہے۔ کوٹ ادو کے نواحی موضع ڈبی  شاہ میں ثنائاللہ چانڈیہ کے گھر کچھ عرصہ قبل طفیل چانڈیہ داخل ہوا تھا اور ثنائاللہ کے جاگنے پر پسٹل کے زور پر فرار ہو گیا تھا،طفیل چانڈیہ ثناء اللہ سے صلح  کوشش کرتا رہا تھا جس کے انکار پر طفیل چانڈیہ اپنے ساتھیوں سلیمان چانڈیہ،زاہد چانڈیہ اور یونس چانڈیہ  کے ہمراہ اسے دھمکیاں دینا شروع کر دی تھیں، گزشتہ روز مغرب کی نماز کے بعد ثناء اللہ اپنے گھر میں موجود تھا کہ اسی اثناء میں طفیل چانڈیہ کے ساتھیوں اور یونس چانڈیہ نے ثنائاللہ چانڈیہ کو آواز دے کر بلایا جو نہی ثنائاللہ باہر آیا تو دونوں نے اس پر فائر کھول دیئے،فائر لگنے سے ثناء اللہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا،پولیس نے مقتول کے سالے غلام اصغر کی مدعیت میں قاتلوں کے خلاف مقدمہ نمبر388/20زیر 302/34/109درج کرکے قاتلوں کی تلاش شروع کردی ہے،  تھانہ لڈن کی حدودمیں غیرت کے نام چھ بچوں کی ماں کو اسکے اپنے شوہر نے  مبینہ طور پرگلہ دباکر قتل کردیا اللہ دتہ شیخ نامی شخص نے اپنی بیوی لعلاں مائی کے منہ پر کپڑا ڈالے اور گلہ دبا کر قتل کیا پولیس تھانہ لڈن نے نعش کا پوست مارٹم کروا کر ورثاء کے حوالہ کردی مقتولہ کی بہن کا کاکہناہے کہ ملزم اللہ دتہ نے دیگر ساتھیوں کے ساتھ ملکر میری بہن کو ناحق قتل کیا ہے جبکہ گرفتار خاوند کا کہنا ہے کہ میری بیوی کے شرف لنگڑیال کے رہائشی سے ناجائز تعلقات تھے وہ پہلے بھی بھاگ چکی تھی اب پھر بھاگنے کے چکر میں جس کے رنج میں آکر میں اسے مارڈالا اور خود تھانہ جاکر گرفتاری دی۔  وہاڑی بورے والا روڈ اڈا ظہیر نگر کے قریب دو کاریں تیز رفتاری کے باعث آپس میں ٹکرا گئیں حادثہ کے نتیجہ میں عارف والا کا رہائشی ندیم عباس موقع پر دم توڑ گیا جبکہ اسکی والدہ شبانہ  ہسپتال پہنچ کر شدید زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی زخمیوں میں خاتون سمیت 6 افراد شامل ہیں جنہیں ریسکیو کی ٹیم نے موقع پر ابتدائی طبی امداد کے بعد ٹی ایچ کیو ہسپتال بوریوالا منتقل کردیا ہے جہاں پر دو افراد کی حالت تشویشناک بتائی جارہی ہے حادثے کا شکار ہونے والے کار سوار بہاولپور سے لاہور اور عارف والہ سے ملتان جارہے تھے زخمیوں میں کامران،محمد عاشق،عدیل جمیل،عاشق حسین،کلیم اور شبانہ شامل ہیں۔ گزشتہ سے پیوستہ شب چک 111پی کے رہائشی تین دوست محمد عمران‘عمیر احمد اورمحمد زینجو نہر صادق برانچ سے موٹرسائیکل پر سوار ہو کرگھر آ رہے کہ تھے کہ مقامی سکول کے سامنے سے گزرنے والی نہر صادق برانچ کی خستہ حال پلی سے گزرنے لگے تو توازان برقرار نہ رکھتے ہوئے موٹرسائیکل سمیت نہر میں جا گرے‘مقامی افراد نے موٹرسائیکل سواروں کو نہر میں گرتے دیکھا تو ریسکیو 1122اور مقامی پولیس کو اطلاع دی جس پر ریسکیو عملہ نے فوری طور پر موقع پر پہنچ کر آپریشن کرتے ہوئے دو دوستوں عمیر احمد اور محمد زین کو زندہ نکال لیا اور موٹرسائیکل بھی نہر سے برآمد کر لیاجبکہ تیسرا30سالہ محمد عمران نہر میں ڈوب گیا جوکہ ریسکیو آپریشن کے بعد بھی نہ مل سکا‘14گھنٹے گزرنے کے بعد محکمہ انہار کے افسران کی جانب سے نہرصادق برانچ کی بندش نہ کرنے پر محمد عمران کے ورثاء  نے اہل علاقہ کی کثیر تعداد کے ہمراہ خانپور اڈا کے مقام پر محکمہ انہار کے افسران کیخلاف ٹائر جلا کر احتجاج مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے احتجاج کرتے ہوئے پل کو ٹریفک کیلئے مکمل طور پر بند کردیاجس سے گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی۔بعد ازاں پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور ڈی ایس پی سٹی سرکل جاوید اختر جتوئی نے مظاہرین نے مذاکرات کرتے ہوئے نہر کی بندش کی یقینی دہانی کرائی‘ تین گھنٹوں کے بعد مظاہرین منتشر ہوگئے اور صادق برانچ پل کو ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا۔ترجمان ریسکیو عدنان شبیر کے مطابق نہر صادق برانچ میں گر کر لاپتہ ہونے والے محمد عمران کی تلاش کیلئے رات گئے تک ریسکیو آپریشن جاری رہا ہے مگر پانی کا بہاؤ تیز ہونے کے باعث ڈوبنے والے محمد عمران کا تاحال پتہ نہ چل سکا ہے۔ خانبیلہ کی رہائشی 23سالہ ذکیہ بی بی نے آئے روز گھریلو ناچاقی سے دلبرداشتہ ہوکر گندم میں رکھنے والی زہریلی گولیاں کھا لیں‘ حالت تشویشناک ہونے پر ورثاء  نے طبی امداد کیلئے شیخ زاید ہسپتال منتقل کیا‘شیخ زاید ہسپتال منتقل ہونے سے قبل ذکیہ بی بی دم توڑ گئی‘جبکہ اقدام خودکشی کرنے والے 7افراد جن میں مڈ درباری کی رہائشی 28سالہ عاصمہ نور‘موضع بسم اللہ پور رہائشی 55سالہ بابری مائی‘ڈہرکی کا 18سالہ غلام حسین‘روشن بھیٹ کا 20سالہ سکندر جی اور فیروزہ کا رہائشی 25سالہ شفیق احمد شامل ہیں‘ ان افراد کو شیخ زاید ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جا رہی ہے۔ تھانہ چوک سرور شہید کے علاقہ چک نمبر 147 ٹی ڈی اے کے رہائشی پادری ارشد مسیح گزشتہ روز عبادت کے سلسلہ میں موٹر سائیکل پر سوار چک نمبر 584 ٹی ڈی اے جا رہا تھا کہ چک نمبر 566 ڈی اے زاہد پٹرولیم کے قریب اوور ٹیک کرتے ہوئے ٹرک نمبر 527 پی کے ٹی کی ٹکر سے پختہ سڑک پر گر گیا اور ٹرک کا پچھلا ٹائر اس کے سر سے گزر گیا جس پر وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا، ٹرک ڈرائیور مظہر عباس چانڈیہ ٹرک موقع پر چھوڑ کر فرار ہوگیا، پولیس چوک سرور شہید نے ٹرک کوقبضہ میں لے کر ڈرائیور مظہر چانڈیہ کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔ کچاکھوہ کے نواحی علاقہ 28/10R سے ملحقہ المرتضی سوسائٹی کے رہائشی ثمر عباس کھوکھر کی اہلیہ گھر میں واشنگ مشین میں کپڑے دھو رہی تھی کہ اچانک واشنگ مشین میں کرنٹ آ گیا جس کی وجہ س نامی خاتون کو کرنٹ لگ گیا اور موقع پر جان کی بازی ہار گئی۔

قتل / حادثات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -