ابتدائی نو ماہ کے دوران لاہور مجموعی طور پُرامن اور محفوظ رہا، سی سی پی او

   ابتدائی نو ماہ کے دوران لاہور مجموعی طور پُرامن اور محفوظ رہا، سی سی پی او

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)کیپٹل سٹی پولیس چیف ایڈیشنل آئی جی غلام محمود ڈوگر نے کہاکہ لاہور پولیس کی آپریشنل و سٹریٹیجک منصوبہ بندی کی وجہ سے سال2021 کے ابتدائی نو ماہ کے دوران صوبائی دارلحکومت مجموعی طور پرْامن اور محفوظ رہا۔بین الااقوامی کرائم انڈیکس پر بھی لاہور شہر کی درجہ بندی محفوظ شہروں کی فہرست میں بہتر اور نمایاں رہی۔غلام محمود ڈوگر نے کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کے استعمال اور انتظامی اصلاحات کی بدولت لاہور پولیس بہتر کارکردگی کے ذریعے عوامی توقعات پر پورا اتر رہی ہے۔ پولیس کارکردگی میں بہتری لانے کے لئے مختلف یونٹس کا انتظامی و سٹرٹیجک ڈھانچہ بھی مزید مضبوط بنایا گیاجس کے نتیجے میں گزشتہ سال کی نسبت امسال رابری،وہیکل چوری و چھیننے،نقب زنی کی وارداتوں میں نمایاں کمی آئی ہے اعداد وشمار کے مطابق لاہور پولیس نے سال 2021ء کے ابتدائی نو ماہ دوران قبضہ مافیا کے خلاف خصوصی مہم کا آغاز کیا جس کے لئے اینٹی قبضہ سیل،ہیلپ لائن 1242 کے قیام کے علاوہ خصوصی ٹیمیں بھی تشکیل دی گئیں سربراہ لاہور پولیس غلام محمود ڈوگر نے بتایا کہ لاہور پولیس نے رواں سال کے ابتدائی نو ماہ کے دوران قبضہ مافیا سے شہریوں اورسرکاری زمینوں جائیدادوں کے مجموعی طور پر 79.83 ارب روپے مالیت کے 5250 کنال رقبہ پر مشتمل 573 قبضے واگذار کروائے۔جرائم پیشہ افراد کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے مجموعی طور پر 42 ہزار 527 ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔رواں سال کے دوران 1320 ڈکیت گینگز کے 3142 ارکان گرفتار کئے گئے۔

ملزمان سے 05 ارب 32کروڑ 92 لاکھ روپے مالیت کا مسروقہ مال بھی برآمد کیا گیا۔ملزمان سے 60کاریں،2737 موٹر سائیکلز، 96دیگر گاڑیاں،33لیپ ٹاپ اور 2918 موبائل فونز بھی برامد کئے گئے۔سی سی پی او لاہور نے بتایا کہ شہر میں بدمعاشوں، رسہ گیروں اور شہریوں کو اسلحہ لہرا کے ہراساں کرنے افراد اور ناجائز اسلحہ کے خلاف رواں سال  گرینڈ آپریشن کے دوران 5149 ملزمان گرفتارکرکے ان کے قبضے سے63 کلاشنکوف،480رائفلز،286بندوقیں،38921پسٹلز، 05کاربین،31ریوالور اور 52ہزار 600سے زائد گولیاں اور کارتوس برآمد کئے گئے۔ ملزمان کے خلاف متعلقہ تھانوں میں 5155مقدمات درج کئے گئے۔غلام محمود ڈوگر نے مزید کہا کہ منشیات فروشوں کے خلاف کریک ڈا¶ن کے دوران مجموعی طورپر 7210ملزمان کوگرفتار کیا گیا اور 7068مقدمات درج کئے گئے۔منشیات فروشوں کے قبضہ سے58کلوگرام ہیروئن،3066کلوگرام سے زائد چرس،21کلو گرام آئس،121کلوگرام افیون اور 75 ہزار لٹر سے زائد شراب برآمد کی گئی۔انہوں نے بتایا کہ اسی طرح رواں  سال کے دوران قمار بازوں کے خلاف کارروائی کے دوران3630ملزمان کو گرفتار کیا گیا جن کے خلاف 719مقدمات درج کر کے ملزمان کے قبضہ سے قمار بازی پر لگائی گئی 79لاکھ59 ہزار روپے سے زائد رقم برآمدکی گئی۔مزید براں لاہور پولیس نے سنگین جرائم میں ملوث 12404عدالتی و اشتہاری مجرمان کو گرفتار کیا۔کیٹیگری اے کے852،کیٹیگری بی کے 7266اشتہاری مجرمان،1292ٹارگٹڈ مفرور اور 2994عدالتی مفرور گرفتار کئے گئے۔پتنگ بازی ایکٹ کی خلاف ورزی میں ملوث 10268ملزمان گرفتار کرکے متعلقہ تھانوں میں 10166مقدمات درج کئے گئے جبکہ ملزمان کے قبضہ سے01 لاکھ 15 ہزار724پتنگیں،18153مختلف ڈوریں اور بڑی تعداد میں پتنگ سازی کا سامان بھی برامد کیا گیا۔غلام محمود ڈوگر نے مزید کہا کہ شہریوں کے جان ومال کے تحفظ کے لئے لاہور پولیس کورونا جیسی جان لیوا وباء کے دوران بھی سینہ سپر رہی اور لاہور پولیس کے سینکڑوں جوان کورونا وباء کا شکار ہوئے جبکہ پانچ جوان اس وباسے شہید بھی ہوئے۔

مزید :

علاقائی -