آنکھوں کے شہر میں، ملتان ٹی ہاؤس میں کتاب کی رونمائی

    آنکھوں کے شہر میں، ملتان ٹی ہاؤس میں کتاب کی رونمائی

  

ملتان (سٹی رپورٹر) ملک کے نامور شاعر ادیب ادبی صنف ہائیکو کے بانی پروفیسر ڈاکٹر محمد امین نے کہا کہ سلیم ناز ادب اور صحافت کا ناز ہیں شاعری اور نثر سمیت ہر شعبہ(بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

 تحریر میں سلیم ناز نے عمدہ تخلیقی کام مرتب کیاہے۔ انکی تحریریں اس وقت شعبہ ادب میں نووارد لکھاریوں کے لئے ایک مستند حوالہ ہیں جنہوں نے نئے اور پرانے موضوعات پر نپی تلی تحریریں رقم کیں سلیم ناز نے ملتان کی ثقافت کو خوب اجاگر کیا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان رائٹرز ونگ کے زیر اہتمام ملتان ٹی ہاس میں سینئر صحافی ادیب دانشور شاعر سلیم ناز کے شعری مجموعہ کی کتاب ''آنکھوں کے شہر میں '' کی تقریب رونمائی سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہاکہ آنکھوں کے شہر میں ایک بہترین شاعری کا شاہکار ہے اس کتاب کی شاعری سادہ عام فہم مگر دلوں کی ترجمان ہے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وی سی نوازشریف زرعی یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر محمد آصف علی نے کہاکہ کتاب کا نام ہی اس کی اہمیت کو واضح کردیتا ہے سلیم ناز نے آنکھوں میں شہر بساکر ناامیدی کو توڑنے کا پیغام دیاہے اور دل کی باتیں کی ہیں ایسے لگتا ہے کہ یہ حسب حال ہے۔ سینئر صحافی کالم نگار جبار مفتی اور ممتاز ماہر تعلیم دانشور پروفیسر ڈاکٹر حمید رضا صدیقی نے کہا کہ کتاب آنکھوں کے شہر میں حقیقت حال کی عکاسی ہے اور احساسات وجذبات کی ترجمان ہے صاحب کتاب کی علمی ادبی صحافتی خدمات میدان ادب کا ایک روشن باب ہے سلیم ناز نے ہر نوجوان لکھاری نو آموز قلمکار کی حوصلہ افزائی کی پذیرائی کی اور نوجوانوں کو قلم و قرطاس سے وابستہ کیا جوکہ قابل تحسین امر ہے۔ صاحب تقریب صاحب کتاب سلیم ناز نے اپنے خطاب میں کہا کہ میں نے اس کتاب میں احساسات کو الفاظ کے قالب میں ڈھالا ہے 35 سالہ صحافتی کیریئر میں کئی انداز آئے جدت آئی مگر الفاظ اور حقیقت بیانی کی تاثیر سب پر بھاری ہے ہم نے قلم کا استعمال حقائق کی ترویج حقیقت بیانی اور احساسات کی ترجمانی کیلئے کیاہے ہمیشہ حوصلہ افزائی کے عمل کا قائل رہا ہوں اور یہی میراطرزعمل تھا ہے اور رہے گا تحریر میں سادگی سلاسیت کی کوشش کی ہے تاکہ ہر شخص تحریر کے پس منظر سے آشنا ہو جائے ایسی کاوشیں مزید بھی سلسلہ بہ سلسلہ منظر عام پر آنے کا سلسلہ جاری رہے گا۔ ادیب شاعر چوہدری شریف ظفر اور صدارتی ایوارڈ یافتہ ادیب شاکر حسین شاکر نے کہا کہ سلیم ناز کا وجود اہلیان جنوبی پنجاب کیلئے کسی نعمت سے کم نہیں انہوں نے کبھی کسی کی حوصلہ شکنی نہیں کی ہمیشہ اپنے قلم کی کاٹ سے جنوبی پنجاب کے مطالبات کو ریکارڈ پر لاکر تسلیم کروایا ہے شاعری اس قدر آسان کام نہیں مگر سلیم ناز نے صحافتی ذمہ داریوں کے باوجود شاعری کو تسلسل سے جاری رکھا اور ایک شاعری کا خوبصورت شاہکار ہم سب کو تحفہ کے طور پر پیش کیا ہے جس پر ہم انکے احسان مند ہیں کہ ایک عرصہ کے بعد اچھی شاعری پڑھنے کو ملی ہے۔ رضی الدین رضی اسٹیشن ڈائریکٹر ریڈیو پاکستان ملتان آصف کھیتران نے کہاکہ سلیم ناز کی شاعری انتہائی جانفشانی اور عرق ریزی کی تخلیقات ہیں اس کی گہرائی میں پس منظر میں طویل مباحثات ہیں جنکو سلیم ناز نے انتہائی سہل انداز میں پیش کیا ہے۔ممتاز مذہبی شخصیت ناظم اعلی جماعت اہلسنت پنجاب علامہ فاروق خان سعیدی اور ڈاکٹر مختار ظفر نے کہا کہ سلیم ناز کی شاعری کے ہمہ قسمی پہلو ہیں انکی کتاب میں انتساب، نعت احوال غزلیات اشعار ہر ایک میں خلوص کی جھلک موجود ہیں یہی انکی شخصیت اور انکی تحریرکا وصف اور طرہ امتیاز ہے۔ اس موقع پر میزبان تقریب سرپرست پاکستان رائٹرز ونگ محمد الیاس ممڑ،سینئر نائب صدر محمد عزیرسلیم،چیئرمین پاکستان رائٹرز ونگ قاری محمد عبداللہ نے کہا کہ سلیم ناز قلمی میدان کے جنوبی پنجاب میں سپہ سالار ہیں جنہوں نے نوجوان قلمکاروں کی آبیاری کی سلیم ناز ادب اور ادب اطفال کا معتبر حوالہ ہیں ملتان کے قلم کاروں ادیبوں شاعروں کو سلیم ناز پر فخر ہے انکی کتاب آنکھوں کے شہر میں ہوا کا ایک خوشگوار جھونکاہے۔دیگر مقررین اظہر سلیم مجوکہ شاہنواز خان ناصر محمود شیخ، افضل سپرا، الیاس ممڑ، غزالہ انجم، عابدہ بزدار، معصومہ بتول، رضیہ رحمان، مامون طاہر رانا، قاری ہدایت اللہ رحمانی،حافظ معین خالد،محمد عزیر سلیم، امتیاز بلوچ، قاری محمد عبداللہ، نعیم اقبال، صہیب اقبال، سہیل عابدی، عبدالرحیم خان، ڈاکٹروجاہت فواز سلیم، ساجد بلوچ، عبدالباری خان، انوارلحق، عرفان رفیع، ساجد شجرا، معاذ انور، نعیم بلوچ ودیگر نے بھی اظہارِ خیال کرتے ہوئے سلیم ناز کی علمی ادبی صحافتی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا اور کتاب آنکھوں کے شہر میں کو میدن ادب میں بہترین اضافہ قرار دیا۔

کتاب رونمائی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -