بچوں کے جنسی استحصال کے واقعات پر کرکٹ آسٹریلیا نے معافی مانگ لی

 بچوں کے جنسی استحصال کے واقعات پر کرکٹ آسٹریلیا نے معافی مانگ لی
 بچوں کے جنسی استحصال کے واقعات پر کرکٹ آسٹریلیا نے معافی مانگ لی

  

کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) بچوں کے جنسی استحصال کے واقعات پر کرکٹ آسٹریلیا نے معافی مانگ لی۔ نجی ٹی وی چینل 24نیوز کے مطابق کرکٹ آسٹریلیا نے متاثرہ لڑکوں سے معافی مانگتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ اس معاملے میں مزید سخت ایکشن لیا جائے تاکہ مستقبل میں اس طرح کے واقعات پیش نہ آئیں۔ 

کرکٹ آسٹریلیا کے چیئرمین لیکلن ہینڈرسن کا کہنا تھا کہ ”جو کچھ ہو چکا ہے اسے ہم نہیں بدل سکتے تاہم ہمیں متاثرین کی مدد اور دلجوئی کے لیے ہرممکن کام کرنے کی ضرورت ہے۔ ملکی اداروں اور تنظیموں کو اس حوالے سے آگے آنا چاہیے۔میں آسٹریلین کرکٹ میں جنسی استحصال کا شکار ہونے والے ہر متاثرہ لڑکے سے معافی مانگتا ہوں۔“ 

واضح رہے کہ رواں سال ایک سابق جونیئر کرکٹر نے کرکٹ آسٹریلیا کے خلاف عدالت سے رجوع کیا گیا تھا۔ کرکٹر کی طرف سے الزام عائد کیا گیا تھا کہ1985ء میں آسٹریلیا کی انڈر 19ٹیم کے بھارت اور سری لنکا کے دورے کے دوران اسے جنسی استحصال کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ 

ایک الگ واقعے میں آسٹریلیا کے سابق کرکٹر آئیان کنگ کو 2009ء میں جیل کی سزا بھی ہو چکی ہے۔ اس پر 1980ء اور 1990ء کی دہائیوں میں سکولوں کے کھلاڑی لڑکوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کا جرم ثابت ہوا تھا۔ آئیان کنگ ان بچوں کا کوچ تھا جب اس نے انہیں بربریت کا نشانہ بنایا۔

مزید :

کھیل -