سید علی گیلانی چوتھی مرتبہ حریت کانفرنس کے چیئرمین منتخب، بھارتی قبضے کے حامی سیاستدان کشمیریوں کے ہمدرد نہیں ہو سکتے: نو منتخب چیئرمین

سید علی گیلانی چوتھی مرتبہ حریت کانفرنس کے چیئرمین منتخب، بھارتی قبضے کے ...
سید علی گیلانی چوتھی مرتبہ حریت کانفرنس کے چیئرمین منتخب، بھارتی قبضے کے حامی سیاستدان کشمیریوں کے ہمدرد نہیں ہو سکتے: نو منتخب چیئرمین

  

سرینگر (مانیٹرنگ ڈیسک) سید علی گیلانی چوتھی بار کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین منتخب کر لئے گئے ہیں، سید علی گیلانی کا کہنا ہے کہ ہماری تہذیب، ثقافت، مذہب اور رہن سہن پاکستان سے منسلک ہے اور اسی رشتے کی بنیاد پر آزادی کی جدوجہد کرتے ہیں۔ آئندہ تین سال کیلئے چیئرمین منتخب ہونے کے بعد پارٹی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے سید علی گیلانی نے آئندہ انتخابات کے بائیکاٹ کیلئے گھر گھر مہم چلانے کی ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ خود انتخابات کا بائیکاٹ کرنا کافی نہیں ہو گا بلکہ اس کیلئے عوامی مہم چلانے کی ضرورت ہے، بھارتی قبضے کے حامی سیاستدان کبھی کشمیریوں کے ہمدرد نہیں ہو سکتے اور انہیں ووٹ کے ذریعے اپنے سروں پر مسلط کرنے کا کوئی جواز نہیں۔ انہوں نے منموہن سنگھ کی تقریر کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ بھارت نے ہمیشہ یہاں کے ووٹ اپنے فوجی قبضے کے جواز کیلئے استعمال کئے۔ علی گیلانی نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ بھارت کی وعدہ خلافیوں اور سازشوں کی پیداوار ہے جو انہوں نے دو قومی نظریہ پر تقسیم ہند کے وقت کشمیری قوم کے ساتھ کئے۔ محض فوج اور طاقت کے بل پر ریاست جموں و کشمیر پر قبضہ کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان کے چند کوتاہ اندیش لیڈران نے بھی بھارت کی چالوں کے خلاف اقدامات نہیں کئے۔ علی گیلانی نے کہا کہ میں نے اپنے سن بلوغت سے آج تک کبھی بھی ایسا نہیں دیکھا کہ دلی میں چاند دیکھا گیا اور ہم نے عید منائی ہو یا روے رکھے ہوں۔ انہوں نے کہا کہ ہماری تہذیب، ثقافت، مذہب اور رہن سہن سب کا سب پاکستان کے ساتھ منسلک ہے اور اسی رشتے کی بنیاد پر بھارت سے آزادی کیلئے ہم جدوجہد کرتے آئے ہیں اور کرتے رہیں گے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں