وفاقی دارالحکومت بھی بھتہ خوری سے نہ بچ سکا، 100 سے زائد تاجروں سے 1 ارب روپے بھتہ وصولی کا انکشاف

وفاقی دارالحکومت بھی بھتہ خوری سے نہ بچ سکا، 100 سے زائد تاجروں سے 1 ارب روپے ...
وفاقی دارالحکومت بھی بھتہ خوری سے نہ بچ سکا، 100 سے زائد تاجروں سے 1 ارب روپے بھتہ وصولی کا انکشاف

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) بھتہ خوری کی لعنت کراچی کے بعد اب وفاقی دارالحکومت میں بھی پہنچ گئی ہے جہاں بھتہ وصولی کے کئی واقعات ہوئے ہیں اور وصول ہونے والی رقم ہنڈی کے ذریعے دبئی سمیت متحدہ عرب امارات کے دیگر شہروں میں بھیجی جا رہی ہے۔ ذرائع کے مطابق کالعدم تحریک طالبان کی جانب سے 100 سے زائد تاجروں سے ایک ارب روپے بھتہ وصول کرنے کا انکشاف ہوا ہے جبکہ پولیس راولپنڈی اور اسلام آباد میں ہونے والے ان واقعات سے بالکل لاعلم ہے۔ پولیس کے خفیہ ادارے کی رپورٹ کے مطابق جڑواں شہروں سے بھتہ خوری کا یہ سلسلہ کئی سالوں سے جاری ہے اور 100 سے زائد تاجروں سے ایک ارب روپے بھتہ وصول کیا گیا ہے۔ ایس ایس پی راولپنڈی اسرار عباسی کا کہنا ہے کہ طالبان کے روپ میں دوسرے لوگ بھی فائدہ اٹھانے کی کوشش کرتے ہیں۔ تاجروں کا کہنا ہے کہ کراچی کی طرح راولپنڈی میں بھی بھتے کی پرچیاں دی جا رہی ہیں اور بہت سے تاجر اغواءبھی ہوئے ہیں۔ خفیہ رپورٹ کے مطابق یہ رقم دہشت گردی کے لئے استعمال ہوتی ہے۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں