پنجاب حکومت کا صنعت کاروں پر اعتماد!

  پنجاب حکومت کا صنعت کاروں پر اعتماد!

پنجاب حکومت نے صنعتکاروں کو ایک اور سہولت دی ہے اور یہ فیصلہ کیا ہے کہ لیبر اور سوشل سیکیورٹی معائنہ ختم کرکے صنعتکار کو یہ سہولت دی جائے کہ وہ خود کار طریقے سے از خود تخمینہ لگائے اور مطلوبہ ٹیکس جمع کرانے کے علاوہ لیبر لاز پر عملدر;200;مد کو یقینی بنائے ۔ اب سوشل سیکیورٹی اور محکمہ لیبر کے انسپکٹر صنعتوں کا معائنہ کرنے نہیں جائیں گے ۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے یہ توقع ظاہر کی کہ صنعتکاروں اور سرمایہ کاروں کو سہولتیں دینے اور ان پر اعتماد کرنے سے سرمایہ کاری میں اضافہ ہو گا ۔ اس سے قبل وفاقی حکومت ٹیکس امور میں نیب کے اختیارات معطل کرنے کا فیصلہ بھی کر چکی ہے ۔ خراب معیشت کو سنبھالتے اور مستحکم کرنے کے حوالے سے حکومت نے ٹیکس نیٹ بڑھانے اور ;200;مدنی میں اضافے کے لئے جو اقدامات کئے ان میں ٹیکسوں کی شرح بڑھانے اور نئے ٹیکس لگانے کے علاوہ ٹیکس وصولی بہتر بنانے کا عزم بھی کیا اس پر ایف بی ;200;ر اور صنعتکاروں اور تاجروں کے درمیان کشیدگی پیدا ہوئی پھر مذاکرات کی نوبت ;200;ئی اور وفاقی حکومت نے نہ صرف بعض محکموں کے اختیارات میں کمی کی بلکہ ٹیکسوں کے بقایا جات بھی معاف کر دیتے جن کی مجموعی رقوم تین سو ارب روپے بنتی ہیں ۔ یہ معافی پچاس فیصد ہے اور ابھی پچاس فیصد بقایا جات کی وصولی باقی ہے جن کا کوئی شیڈول جاری نہیں کیا گیا ۔ اب پنجاب حکومت نے بھی سرمایہ کار دوستی کی طرف قدم بڑھا دیا ہے اور معائنہ ختم کرکے اعتماد کا اظہار کیا ۔ لیبرلاز اور سوشل سیکیورٹی فنڈ ہر دو کارکنوں اور مزدوروں کی بہبود سے متعلق ہیں ۔ مالکان کو محنت کے حکومتی قوانین پر عمل کرکے مزدوروں کے اوقات کار اور کام کا تعین کرنا اور رعایت دینا لازم ہوتا ہے جبکہ سوشل سیکیورٹی فنڈ ہے ۔ اس سے مزدوروں ، کارکنوں کے لئے بہبود کے کام ہوتے ہیں ۔ ان میں علاج معالجہ بھی شامل ہے ۔ شعبہ سوشل سیکیورٹی کے تحت ہسپتال اور ڈسپنسریاں بھی کام کر رہی ہیں ان میں رجسٹرڈ فیکٹری ملازمین کا علاج ہوتا ہے اور انسپکٹر وصولی بھی کرتے تھے ۔ یہ درست کہ حکومت نے اعتماد کیا اور توقع کی کہ مالکان از خود قوانین اور قواعد پر عمل کریں گے ۔ اللہ کرے کہ یہ سب اسی انداز اور اسی طرح ہو جس نیت کا اظہار کیا گیا ہے، تاہم ماضی شاہد ہے کہ یہ سلسلہ از خود والا نہیں تھا اور اسی لئے معائنہ کار مقرر کئے گئے تھے ۔ پنجاب حکومت نے اگر یہ فیصلہ کیا تو سرمایہ کاروں ;223; صنعتکاروں کا بھی فرض ہے کہ وہ اس اعتماد پر پورے اتریں اور خود صوبائی حکومت کو بہرحال یہ دیکھنا ہو گا کہ اس رعایت سے محنت کشوں کو نقصان نہ ہو کہ لیبر قوانین و قواعد کی خلاف ورزیاں عام ہیں ۔

مزید : رائے /اداریہ


loading...