بچوں پر مظالم‘ موثر قانون سازی  وقت کی اہم ضرورت‘ ام کلثوم سیال

 بچوں پر مظالم‘ موثر قانون سازی  وقت کی اہم ضرورت‘ ام کلثوم سیال

  

چوک پرمٹ (نمائندہ پاکستان)زین بد فعلی کیس کے ملزمان کو سخت سے سخت سزا دی جائے تاکہ آئندہ کوئی ایسی گھناؤنی (بقیہ نمبر40صفحہ 7پر)

حرکت کرنے کی جرات نہ کر سکے ان خیالات کا اظہار معروف سماجی شخصیت ایگزیکٹو ڈائریکٹر سائیکوپ میڈم اُم کلثوم سیال نے کیا انہوں نے کہا کہ جتوئی کے نواحی علاقہ بستی اللہ بخش کے رہائشی معصوم بچے زین العابدین کے ساتھ اوباشوں کی بدفعلی کی کوشش میں ناکامی پر گولی مارنا بہت بڑا جرم ہے اور بچوں کے ساتھ بڑھتی ہوئی زیادتیوں اور مظالم پر موثر قانون سازی کی جہاں ضرورت ہے وہاں قوانین میں مزید سختی کی بھی ضرورت ہے انہوں نے کہا کہ ایک اسلامی معاشرے میں اس قسم کے جرائم کا عام ہونا حکمران طبقہ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے لئے سوالیہ نشان ہے جبکہ ریاست مدینہ کا نعرہ لگانے والے حکمرانوں کے کھوکھلے دعووں کی قلعی کھل گئی ہے اور آئے روز بچوں اور خواتین کے ساتھ واقعات نے ہماری معاشرتی اقدار اور روایات کی نفی کی ہے جس سے معاشرہ غیر متوازن ہوتا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے علاوہ والدین کی بھی ذمہ داری ہے کہ بچوں کی حفاظت کو یقینی بنائیں اور اس قسم کے واقعات میں ملوث درندوں کو نشان عبرت بنایا جائے۔

ضرورت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -