تمام وزراء اور متعلقہ حکام شکایات سیل میں عوامی شکایات سنیں گے: کامران بنگش

تمام وزراء اور متعلقہ حکام شکایات سیل میں عوامی شکایات سنیں گے: کامران بنگش

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلی خیبرپختونخوا کی خصوصی ہدایت پر وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی برائے اطلاعات و بلدیات کامران بنگش نے عوام کو بہترین خدمات کی فراہمی یقینی بنانے اور عوامی شکایات کے ازالے کے لیے خپل وزیراعلی شکایات سیل میں بدھ کے روز عوامی شکایات سنیں۔ اس موقع پر معاون خصوصی کے ہمراہ ڈائریکٹر جنرل لوکل گورنمنٹ عابد اللہ کاکاخیل، سیکرٹری لوکل کونسل بورڈ حضر حیات سمیت دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔ معاون خصوصی کامران بنگش نے ایک گھنٹے تک عوامی شکایات توجہ سے سنیں جبکہ جو عوامی شکایات حل ہوئیں ان پر عوام سے فیڈ بیک بھی لیا گیا۔ معاون خصوصی برائے اطلاعات و بلدیات نے عوامی شکایات لیتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ سیل میں ضم شدہ اضلاع کیلئے سیکشن مخصوص ہے۔ تاکہ وہاں سے عوام دیگر اضلاع کی طرح شکایات درج کروائیں تاکہ ان کا بھی بروقت حل ہو سکے جس سے وہاں پر پائے جانے والے احساس محرومی کا خاتمہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ شکایات کے فوری حل کے لیے سیل تمام انتظامی اداروں سے جڑا ہے۔خپل وزیراعلی شکایات سیل کی اہمیت پر بات کرتے ہوئے معاون خصوصی کامران بنگش نے کہا کہ عوامی نمائندے اب عوام کی دسترس میں ہونگے۔ تمام وزرا و متعلقہ حکام شکایات سیل میں عوامی شکایات سنیں گے۔ جس کے حل کے لیے بروقت اقدامات و احکامات جاری کیے جائیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ چھٹی سسٹم کو ختم کرکے ای کمپلینٹ مینجمنٹ کو متعارف کیا گیا ہے جس سے مسائل تندہی سے حل ہونگے۔ جب کہ یہ بہترین گورننس کی جانب ایک عملی قدم ہے۔ خپل وزیراعلی شکایات سیل میں معاون خصوصی کامران بنگش ایک گھنٹہ تک مصروف رہے اس دوران انہوں نے پانچ سے زیادہ حل شدہ شکایات کا فیڈ بیک بھی لیا جبکہ دس شکایات پر خود عوام سے بات کرکے نوٹ کروائیں۔معاون اطلاعات و بلدیات کامران بنگش نے نئے ضم شدہ اضلاع کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بہترین خدمات کی فراہمی سے ضم شدہ اضلاع کے عوام کی سترسالہ محرومیوں کا ازالہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی محمود خان سمیت تمام عوامی نمائندگان خود عوام کی کالز اٹینڈ کرینگے اور ان کے مسائل و شکایات کے لیے عملی اقدامات اٹھائیں گے۔ 

مزید :

صفحہ اول -