صوابی، شدید بارشوں سے کچے مکانات منہدم: سیلاب میں پھنسے 8افراد کو نکال لیا گیا 

صوابی، شدید بارشوں سے کچے مکانات منہدم: سیلاب میں پھنسے 8افراد کو نکال لیا ...

  

صوابی(بیورورپورٹ) ضلع صوابی میں منگل اور بدھ کی در میانی شب ہونے والی بارش سے مزید کچے مکانات گر گئے ہیں۔ ریسکیوگیار بائیس کی غوطہ خور ٹیم نے ہنڈ کے مقام پر دریائے سندھ میں پھنسے ہوئے تین بچوں سمیت آٹھ افراد کو پانی میں ڈوبنے سے بچا لیا یہ افراد دریائے سندھ میں پانی کا بہاؤ زیادہ ہونے کی وجہ سے دریا میں پھنس چکے تھے۔ریسکیو کے غوطہ خوروں نے تمام افراد کو بچا کر محفوظ مقام پر منتقل کر دیا۔ علاقہ گدون آمازئی میں شدید بارش سے پانی کنڈل ڈیم میں داخل ہونے سے اضافی پانی کھیتوں میں داخل ہو گیا۔جب کہ غازی میں عوام کی جانب سے اپنی مدد آپ کے تحت نو تعمیر شدہ پل پانی میں بہہ گیا جس کی وجہ سے کنڈل ڈیم کا دیگر علاقوں سے رابطہ منقطع ہو گیا ہے۔جب کہ کنڈل ڈیم روڈ سیلابی پانی میں بہہ گیا ہے۔شدید بارشوں کی وجہ سے سلائڈنگ کی وجہ سے تکیل گدون روڈ ٹریفک کے لئے بند کر دیا گیاہے۔ دریں اثناء افغان مہاجر کیمپ گدون میں مہاجر دوست محمد، موضع نارنجی میں پذیر شاہ موضع زیدہ میں محمد یوسف محلہ طاؤس خانی موضع شیخ جانہ میں بیوہ حیات خان کے مکانات کے چھت گر گئے ہیں تاہم جانی نقصان نہیں ہوا۔ گنی چھترہ میں بارش کی چھت گرنے سے دو مویشی ہلاک ہو گئے ٹوپی گدون خوڑ میں موٹر سائیکل پانی میں بہہ گیا مگر موٹر سائیکل سوار کو بچا لیا گیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -