عثمان بزدار کی بڑی کامیابی ، لیہ میں 100 میگاواٹ سولر پراجیکٹ شروع کرنے کے معاہدے پر دستخط ہو گئے 

عثمان بزدار کی بڑی کامیابی ، لیہ میں 100 میگاواٹ سولر پراجیکٹ شروع کرنے کے ...
عثمان بزدار کی بڑی کامیابی ، لیہ میں 100 میگاواٹ سولر پراجیکٹ شروع کرنے کے معاہدے پر دستخط ہو گئے 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی حکومت نے ایک اور اہم سنگ میل عبور کر لیاہے ، ضلع لیہ کے علاقے چوبارہ میں 100 میگا واٹ کا سولر پراجیکٹ شروع کرنے کے معاہدے پر دستخط کر لیے گئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق معاہدے پر دستخط کی تقریب وزیراعلیٰ آفس میں ہوئی جس دوران عثمان بزدار اور وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب خان مہمان خصوصی تھے ۔لیٹر آف سپورٹ پر پنجاب پاور ڈویلپمنٹ بورڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر، متبادل توانائی ترقی بورڈ کے چیف ایگزیکٹوآفیسر اور زینفاپاکستان نیو انرجی کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر نے لیٹر آف سپورٹ پر دستخط کئے۔

اس موقع پر عثمان بزدار نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انرجی سے نہ صرف عام شہری مستفید ہوتے ہیں بلکہ صنعتوں کا پہیہ بھی چلتا ہے، پنجاب میں آبادی اورترقی پذیر معیشت کی وجہ سے توانائی کی ضروریات باقی صوبوں کی نسبت زیادہ ہے ،حکومت پنجاب آئین پاکستان کے تحت توانائی کی تمام تر ضروریات اپنے وسائل سے حاصل کرنے کے لئے کوشاں ہے، بجلی کی ملکی پیداوار کا تقریباً70فیصد پنجاب میں استعمال ہوتا ہے، بجلی سے حاصل ہونے والی ملک بھر کی کل آمدنی کا 82فیصد ریونیو پنجاب ادا کرتا ہے، ماضی کے برعکس ہماری حکومت سستی بجلی کے دیر پا ذرائع کے حصول کی طرف گامزن ہے۔

انہوں نے کہا کہ سابق حکومت نے انرجی کے مہنگے منصوبے لگائے جس سے عوام پر بوجھ پڑا، پنجاب میں سکولوں،کالجوں اور یونیورسٹیوں ،بنیادی مراکز صحت سمیت دیگر سرکاری عمارتوں کو مرحلہ وار شمسی توانائی پر منتقل کیاجائے گا،پنجاب کے 950بنیادی مراکز صحت کو سولر انرجی پر منتقل کرنے کے منصوبے پر کام جاری ہے۔

انہوں نے کہا کہ Punjab Energy Efficiency and Conservation Agency محکمہ انرجی کے زیر اہتمام لاہور کی یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی اوردیگر سرکاری اداروں کی سولر آئزیشن کیلئے ٹیکنیکل ایڈوائس فراہم کررہاہے۔پنجاب میں توانائی کی بچت کیلئے Energy Conservation Building Codes مرتب کیے جاچکے ہیں۔ان پر عملدرآمد کر کے حکومت پنجاب اربوں روپے کی بچت کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔

ان کا کہناتھا کہ انڈسٹریل سٹیٹس،واساز،اورنج لائن ٹرین جیسے منصوبوں کو بھی توانائی کے متبادل ذرائع پر منتقل کرنے کی تجویز کا جائزہ لیا جارہاہے ، انرجی سیکٹرمیں سرمایہ کاری کے بے شمار مواقع موجود ہیں،حکومت سرمایہ کاروں کی بھرپور معاونت کررہی ہے، پنجاب پاور ڈویلپمنٹ بورڈمیں ون ونڈو آپریشن کے ذریعے توانائی سیکٹر میں سرمایہ کاروں کو سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں، توانائی معاہدوں پر عملدرآمد کو کم از کم وقت میں یقینی بنانے کیلئے میکنزم بنایا ہے۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار کا کہناتھا کہ زینفا پاکستان نیو انرجی کمپنی کے ساتھ آج ہونے والا معاہدہ اسی سلسلے کی کڑی ہے ، حکومت پنجاب اس منصوبے میں صرف 3.7سینٹ کے نرخ پر بجلی خرید ے گی ،اس منصوبے سے نیشنل گرڈ کو 17 کروڑ30لاکھ یونٹ بجلی فراہم کی جائے گی، یہ بجلی تقریباً 70ہزار گھروں کی ضرورت کو پورا کرنے کیلئے کافی ہوگی، پنجاب میں ویسٹ ٹوانرجی پراجیکٹ کا بھی جائزہ لے رہے ہیں جو متبادل توانائی کے حصول کا بہترین ذریعہ ثابت ہوگا۔

مزید :

قومی -