"سشانت سنگھ راجپوت کو 13 سال سے یہ سنگین بیماری تھی" ڈاکٹرز نے پولیس کو ایسی بات بتادی کہ تفتیش کا رخ ہی بدل گیا

"سشانت سنگھ راجپوت کو 13 سال سے یہ سنگین بیماری تھی" ڈاکٹرز نے پولیس کو ایسی ...

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سشانت سنگھ راجپوت خودکشی کیس میں ہر روز نئے انکشافات سامنے آرہے ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق آنجہانی اداکار کی خود کشی کیس میں اب یہ انکشاف سامنے آیا ہے کہ انہیں گزشتہ 13 برس سے بائی پولر ڈس آرڈر تھا۔ یہ انکشاف ڈاکٹرز نے ممبئی پولیس کے روبرو کیا۔ سشانت کی بہن بھی پولیس کے سامنے یہ اعتراف کرچکی ہے کہ ایک بار 2013 میں بھی سشانت کی طبیعت بہت زیادہ خراب ہوگئی تھی۔

خیال رہے کہ بائی پولر ڈس آرڈر ایک ایسی بیماری ہے ، جس میں مریض کا ذہن مسلسل بدلتا رہتا ہے ۔ اس بیماری میں مبتلا مریض کبھی بہت زیادہ خوش ہوجاتا ہے تو کبھی بہت زیادہ دکھی ہوجاتا ہے۔ اس بیماری کے بڑھ جانے پر مریض خودکشی کی بھی کوشش کرسکتا ہے ۔

ماہرین کا کہان ہے کہ بائی پولر ڈس آرڈر ڈپریشن کا ہائی لیول ہے ۔ یہ ایک طرح کی ذہنی بیماری ہے ۔  اس کا شکار ہونے سے پہلے مریض ڈپریشن کا شکار ہوتا ہے ۔ ڈپریشن کا علاج نہ ہونے کی وجہ سے مریض بائی پولر ڈس آرڈر کا شکار ہونے لگتا ہے ۔

مزید :

تفریح -