"میں جتنی روٹی کھاتا اتنی بار سگریٹ سے جلایا جاتا" 10 سالہ بچے نے اپنی ماں کے آشنا کے بارے میں ایسی بات کہہ دی کہ روح کانپ اٹھے

"میں جتنی روٹی کھاتا اتنی بار سگریٹ سے جلایا جاتا" 10 سالہ بچے نے اپنی ماں کے ...

  

جے پور (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست راجستھان میں معصوم بچوں پر ماں کے آشنا کی جانب سے ظلم و ستم کی داستان رقم کرنے کی خبر نے والدین کے دل دہلادیے۔

ضلع سری گنگا نگر میں ایک خاتون نے 2 سال قبل اپنے شوہر کو چھوڑ کر آشنا کے ساتھ رہنا شروع کردیا تھا، اس کے تین بچے بھی اسی کے ساتھ رہ رہے تھے۔ خاتون کا آشنا اس کے بچوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑتا اور ماں خاموش تماشائی بنی دیکھتی رہتی۔ ایک دن 10 سالہ بچہ وہاں سے بھاگ نکلا اور اپنے دادا، دادی کے پاس پہنچ گیا جنہوں نے چائلڈ ہیلپ سے رابطہ کیا۔

بچے نے بتایا کہ اس کی ماں کا آشنا اس پر بہت زیادہ ظلم کرتا تھا، "میں جتنی روٹیاں کھاتا تھا وہ اتنی بار میرے جسم کو سگریٹ سے داغتا تھا، اس کے علاوہ میری 7 سالہ بہن پر بھی ظلم کیا جاتا تھا۔"

بیان لینے کے بعد چائلڈ ہیلپ نے بچوں کے سگے باپ، دادا اور دادی سے رابطہ کیا تو انہوں نے آنے سے انکار کردیا جس کے بعد انہیں سرکاری تحویل میں لے کر ملزم کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی گئی ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -