'اس سال 25 فیصد زیادہ بارشوں کی پیشگوئی تھی ، 150 فیصد زیادہ بارشیں ہوئیں ،چیئرمین این ڈی ایم اے کا بیان

'اس سال 25 فیصد زیادہ بارشوں کی پیشگوئی تھی ، 150 فیصد زیادہ بارشیں ہوئیں ...
'اس سال 25 فیصد زیادہ بارشوں کی پیشگوئی تھی ، 150 فیصد زیادہ بارشیں ہوئیں ،چیئرمین این ڈی ایم اے کا بیان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) چیئرمین این ڈی ایم اے نے اب تک  ملک میں سیلاب کی تباہ کاریوں اور ریلیف  سے متعلق  بتایا کہ اس سال 25 فیصد زیادہ بارشوں کی پیش گوئی تھی مگر 150 فیصد زیادہ بارشیں ہوئیں۔

چیئرمین نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے ) نے نیشنل فلڈ رسپانس سینٹر میں نیوز بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ  اب تک طوفانی بارشوں او سیلاب کے باعث ایک ہزار 265 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں ، رواں سال چار ہیٹ ویوز کا سامنا رہا ، مون سون بارشیں اڑھائی سے تین ہفتے قبل شروع ہوئیں ۔ سندھ اور بلوچستان سب سے زیادہ متاثر ہوئے ، حالات سے نمٹنے کیلئے  وفاقی سطح پر  ریلیف اینڈ ریسکیو آپریشن  کوآرڈینیشن کرنے کیلئے ریلیف کوآرڈینیشن  کمیٹی قائم کی جس کی صدارت احسن اقبال کو سونپی گئی ، حالات کو دیکھتے ہوئے نیشنل ایمرجنسی ڈکلیئر کی گئی اور پاکستان  آرمی کی خدمات آرٹیکل 245 کے تحت حاصل کی گئی ، وفاقی حکومت نے  کمپنسیشن  پیکیج میں اضافہ کیا  ،  حکومت نے جو بڑا قدم لیا وہ این ڈی ایم اے اور بی آئی ایس پی کی شراکت سے فی متاثرہ گھرانے کو  25 ہزار روپے  دینے کا فیصلہ ہے جس کا بلوچستان سے آغاز کر دیا گیا ہے جو دیگر صوبوں تک بھی پہنچ رہا ہے ۔ 

چیئرمین این ڈی ایم اے نے کہا کہ حالات کے باعث فوری طور پر اشیائے ضروریہ کا اندازہ لگایا کر متعلقہ منسٹری سے شیئر کیا جس نے بعد ازاں وہ مخیر حضرات سے شیئر کیا،این ڈی ایم اے نے یونائیٹڈ نیشن کے ساتھ مل کر یو این فلیش اپیل لانچ کی جس کا بہت اچھا اور مثبت رزلٹ آیا۔   متاثرہ علاقوں میں جوائنٹ سروے کیا جس میں وفاقی حکومت ، صوبوں اور آرمی  نے مل کر سروے کیا ، یہ سروے  بلوچستان  میں جاری ہے  بہت جلد دیگر صوبوں میں بھی شروع ہو جائیں گے ، این ڈی ایم اے نے دیگر اداروں سے مل کر 4 لاکھ  30 ہزار ٹینٹ مہیا کئے ، اپنی کپسٹی کو بڑھانے کیلئے انڈسٹری کے ساتھ میٹنگ کی گئی اور مینو فیکچررز کو پیداوار بڑھانے کا کہا۔

چیئرمین این ڈی ایم اے نے کہا کہ عالمی سطح پر  بہت مثبت رد عمل آرہا ہے ،  پچھلے چار دنوں میں اب تک ہمارے پاس  29ریلیف فلائٹس آچکی ہیں ، ترکیہ سے  10 ، یو اے ای سے 11، چین  سے 4 ، قطر  سے 2، فرانس اور ازبکستان کی طرف سے ایک ایک فلائٹ آئی ۔ یو اے ای ، اردن  ، ترکمانستان سے فلائٹس آنی ہیں ان میں  دو ہزار 728  ٹنٹ،  راشن  اور  ہائی پاور کی موٹر بوٹس شامل ہیں ۔ 

چیئرمین این ڈی ایم اے نے کہا کہ  ترکیہ کی جانب سے  56 ٹن  ادویات  اور ایک میڈیکل ٹیم پہنچے گی جبکہ فرانس کی جانب سے بھی ایک میڈیکل ٹیم آئے گی ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -