حکومت نے آئی ایم ایف کو 180 ارب روپے کے نئے ٹیکس لاگو کرنے کی یقین دہانی کرادی،بڑا دعویٰ

حکومت نے آئی ایم ایف کو 180 ارب روپے کے نئے ٹیکس لاگو کرنے کی یقین دہانی ...
حکومت نے آئی ایم ایف کو 180 ارب روپے کے نئے ٹیکس لاگو کرنے کی یقین دہانی کرادی،بڑا دعویٰ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت نے انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ(آئی ایم ایف) کو مالی سال 2022-23ءکے دوران 180ارب روپے کے نئے ٹیکس لاگو کرنے کی یقین دہانی کرا دی۔ نیوز ویب سائٹ’پروپاکستانی‘ نے دعویٰ کیا ہے کہ ان نئے ٹیکسز میں مشروبات پر 60ارب روپے کی فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی بھی شامل ہے۔ 
حکومت کی طرف سے آئی ایم ایف کو یقین دہانی کرائی گئی ہے کہ ایندھن پر جنرل سیلز ٹیکس فوری طور پر بڑھایا جائے گااور اسے بتدریج بڑھاتے ہوئے 17فیصد کی سطح تک لیجایاجائے گا۔اس کے علاوہ ایسی اشیاءپر ٹیکس کی شرح میں اضافہ کیا جائے گا جو درآمد کی جاتی ہیں۔ باقی 120ارب روپے کے ریونیو کے لیے دیگر اقدامات کے ساتھ ساتھ گریڈ اول اور گریڈ دوئم کے سگریٹس پر فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی میں فوری طور پرکم از کم 2فیصد کا اضافہ کیا جائے گا۔