عدالت نے سیلاب متاثرین کے لیے فوری طور پر خیمہ بستیاں بسانے کا حکم دے دیا

عدالت نے سیلاب متاثرین کے لیے فوری طور پر خیمہ بستیاں بسانے کا حکم دے دیا
عدالت نے سیلاب متاثرین کے لیے فوری طور پر خیمہ بستیاں بسانے کا حکم دے دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ ہائی کورٹ سکھر بنچ نے صوبے میں سیلاب متاثرین کے لیے فوری طور پر خیمہ بستیاں بسانے کا حکم دے دیا۔ نیوز ویب سائٹ’پروپاکستانی‘ کے مطابق جسٹس ظفر احمد راجپوت کی سربراہی میں عدالت عالیہ کے اس بنچ نے سیلاب کی تباہ کاریوں سے متعلق ایک کیس کی سماعت کرتے ہوئے یہ حکم جاری کیا۔ دوران سماعت معزز عدالت نے ضلعی انتظامیہ کی طرف سے ریسکیو اور ریلیف کے کاموں میں سستی اور لاپروائی پر ناگواری کا اظہار بھی کیا۔
عدالت نے ضلع سکھر کے کمشنر رفیق احمد بوریرو سے استفسار کیا کہ اب تک کتنے افراد کو ریسکیو کیا جا چکا ہے اور انہیں کیا سہولیات دی جا رہی ہیں؟ عدالت نے سندھ حکومت کو ہدایت کی کہ وہ صوبہ بھر میں فوری طور پر خیمہ بستیاں بسائے، جن میں طبی سہولیات بھی مہیا ہوں۔
عدالت عالیہ نے شہریوں پر مشتمل کمیٹیاں بنانے کی ہدایت بھی کی جو سیلاب متاثرین کے لیے کی جانے والی امدادی سرگرمیوں کی نگرانی کریں۔ عدالت نے کہا کہ یہ کمیٹیاں سول ججز کی نگرانی میں کام کریں گی۔ عدالت نے صوبائی حکومت سے کہا کہ وہ فوری طور پر تباہ ہونے والی نہروں کی تعمیر و مرمت کا کام شروع کرے اور اس حوالے سے عدالت میں رپورٹ جمع کرائے۔