ایمازون سے 169 روپے میں مورتیاں خرید کر گاﺅں والوں کو لوٹنے کا منصوبہ ڈلیوری ایجنٹ نے ناکام بنادیا

ایمازون سے 169 روپے میں مورتیاں خرید کر گاﺅں والوں کو لوٹنے کا منصوبہ ڈلیوری ...
ایمازون سے 169 روپے میں مورتیاں خرید کر گاﺅں والوں کو لوٹنے کا منصوبہ ڈلیوری ایجنٹ نے ناکام بنادیا
سورس: Screengrab

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک نوسرباز نے مندر بنانے کی آڑ میں لوگوں کو ہزاروں روپے کا چونا لگا دیا۔ انڈیاٹائمز کے مطابق اشوک کمار نامی اس نوسرباز کا تعلق ریاست اترپردیش کے ضلع اُناو میں واقع گاﺅں محمود پور سے ہے، جس نے اپنے دو بیٹوں کے ساتھ مل کر گاﺅں والوں کو بے وقوف بنا کر لوٹنے کا منصوبہ بنایا۔اس نے دیوتاﺅں کی کچھ مورتیاں آن لائن آرڈر کیں اور گاﺅں والوں سے یہ جھوٹ بول دیا کہ یہ مورتیاں کھدائی کے دوران اس کے کھیتوں سے نکلی ہیں۔
اشوک کمار نے گاﺅں والوں سے کہا کہ دو مورتیاں خود بخود زمین کو پھاڑتی ہوئی اوپر آئیں جبکہ باقی کو کھدائی کر کے اس نے اور اس کے بیٹوں نے نکالا۔ اس کے بیٹوں نے بھی اپنے باپ کے جھوٹ پر گواہی دی اور لوگوں سے کہا کہ یہ مورتیاں نکلنے کا مطلب یہ ہے کہ دیوتا چاہتے ہیں کہ گاﺅں میں ایک مندر بنایا جائے جس میں ان مورتیوں کو رکھا جائے۔
توہم پرست لوگوں نے ان کی بات پر یقین کر لیااور مندر کی تعمیر کے لیے انہیں چندہ دینا شروع کر دیا۔ یہ بات گردونواح کے دیہات میں بھی پھیل گئی اور وہاں سے بھی لوگ ان مورتیوں کے درشن کے لیے آنے اور چندہ دینے لگے۔ تاہم چند دن بعد ہی ایمازون کے مقامی ڈلیوری ایجنٹ نے ان باپ بیٹوں کے جھوٹ کا بھانڈہ پھوڑ دیا۔ 


ان باپ بیٹے نے یہ مورتیاں ایمازون سے ہی 169روپے میں خریدی تھیں اور اسی ڈلیوری ایجنٹ نے انہیں ڈلیور کی تھیں۔ ڈلیوری ایجنٹ نے یہ بات لوگوں کو بتا دی، جس پر ان کے خلاف پولیس کو رپورٹ کر دی گئی۔ پولیس نے ملزمان کو گرفتار کرکے ان کے خلاف لوگوں کو دھوکا دے کر رقم ہتھیانے اور امن عامہ میں نقص ڈالنے کے الزامات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔