وفاقی حکومت گندم ایکسپورٹ پالیسی کو از سر نو مرتب کرے: ڈاکٹر بلال صوفی

وفاقی حکومت گندم ایکسپورٹ پالیسی کو از سر نو مرتب کرے: ڈاکٹر بلال صوفی
وفاقی حکومت گندم ایکسپورٹ پالیسی کو از سر نو مرتب کرے: ڈاکٹر بلال صوفی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

 لاہور(کامرس رپورٹر)پاکستان فلور ملنگ انڈسٹری ایف پی سی سی آئی کے چیئرمین ڈاکٹر بلال صوفی نے وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف اور وزیر خزانہ اسحاق ڈار سے مطالبہ کیا ہے کہ وفاق گندم کی ایکسپورٹ پالیسی کو از سر نو مرتب کرے اور اس کو جنگی بنیادوں پر جاری کرے۔ انہوں نے بتایا کہ ملک میں اپریل میں اضافی گندم کی مقدار 40 لاکھ ٹن ہوگی جبکہ آئندہ فصل جو 20 اپریل سے مارکیٹ میں آئے گی وہ بھی 2 کروڑ 60 لاکھ ٹن ہوگی ۔ وفاقی حکومت کو چاہیے کہ ایکسپورٹ کی عارضی پالیسی کو ختم کرکے پورے سال کیلئے ایک مستقل پالیسی بنائے جس میں 15 اپریل کو واضح اعلان کیا جائے کہ پاکستان اس سال 2015 ء میں 40 لاکھ ٹن گندم برآمد کرے گا اور اس کے لئے شرائط پر مبنی ایس او پی کو نرم اور قابل قبول بنائے جائے، اگر ایسا نہ کیا گیا تو نہ صرف کسان کو دھچکا لگے گا بلکہ انڈسٹری بھی تباہ ہوگی لہٰذا ملک کو شدید مالی بحران سے بچانے کیلئے گندم ایکسپورٹ کی مستقل پالیسی کا اعلان کیا جائے۔

مزید : کامرس