ہائیکورٹ نے کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنزپاکستان کے انتخابات رکوانے کی درخواست نمٹادی

ہائیکورٹ نے کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنزپاکستان کے انتخابات رکوانے کی درخواست ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی ) لاہور ہائیکورٹ نے کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنزپاکستان کے انتخابات رکوانے کی درخواست نمٹاتے ہوئے قرار دیا ہے کہ عدالتی حکم عدولی ہوئی تو متعلقہ افراد کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے گی۔مسٹر جسٹس اعجاز الاحسن نے ڈاکٹر عبدالمنان بابر کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل ملک اویس خالد نے موقف اختیار کیا کہ کالج آف فزیشن اینڈ سرجنز پاکستان کے 4اپریل کو ہونے والے انتخابات عدالتی حکم کو نظر انداز کرتے ہوئے کروائے جا رہے ہیں، لاہور ہائیکورٹ نے سی پی ایس پی کے انتخابات کروانے کے رہنماء اصول طے کرتے ہوئے انہی اصولوں کے مطابق انتخابات کروانے کا حکم دے رکھا ہے تا ہم سی پی ایس پی کا الیکشن کمیشن عدالتی حکم کو نظر انداز کر رہا ہے ،4 اپریل کو کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان کے ہونے والے انتخابات روکنے کا حکم دیا جائے، سی پی ایس پی کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ آج4اپریل کو ہونے والے انتخابات عدالتی حکم کے عین مطابق کروائے جا رہے ہیں ،کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان کے انتخابات روکنے کی درخواست خارج کی جائے ، عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد درخواست نمٹاتے ہوئے قرار دیا ہے کہ عدالتی حکم کے مطابق انتخابات نہ کروانے والوں کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے گی۔

کالج آف فزیشنز

مزید : صفحہ آخر