اگر آپ بھی حد سے زیادہ چائے پیتے ہیں تو خبر دار ہو جائیں،آپ کا بھی ایسا انجا م ہو سکتاہے

اگر آپ بھی حد سے زیادہ چائے پیتے ہیں تو خبر دار ہو جائیں،آپ کا بھی ایسا انجا ...
اگر آپ بھی حد سے زیادہ چائے پیتے ہیں تو خبر دار ہو جائیں،آپ کا بھی ایسا انجا م ہو سکتاہے

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) آئس ٹی کا شوق آج کل بہت عام ہوتا جارہا ہے لیکن اس کے استعمال میں محتاط رہنے کی بھی ضرورت ہے کیونکہ اس کی حد سے زیادہ مقدار خطرناک نتائج کی حامل ہوسکتی ہے۔

مزیدپڑھیں:برگر اور پیز ا کھانے والے شوقین افراد کیلئے انتہائی بری خبر

امریکی ریاست آرکنسا کے ایک ہسپتال میں لائے جانے والے 56 سالہ شخص کو دل گھبرانے، کمزوری، کاہلی اور جوڑوں کے درد کی شکایت تھی۔ اس کے معائنے سے معلوم ہوا کہ پتھری کی وجہ سے اس کے گردے ضائع ہوچکے تھے۔ ڈاکٹر اس کا تفصیلی معائنہ کرنے کے باوجود مسئلے کی وجہ معلوم کرنے میں ناکام رہے لیکن جب اس شخص نے اپنی چائے نوشی کی عادات کے بارے میں بتایا تو اس کی خوفناک بیماری کی وجہ بھی سامنے آگئی۔ یہ شخص روزانہ آئس ٹی کے 250 ملی لیٹر والے 16 گلاس پی رہا تھا یعنی اس کی آئس ٹی کا روزانہ استعمال تقریباً 4 لٹر تھا۔

 یونیورسٹی آف آرکنسا کی ڈاکٹر عنبر غفار نے اس واقعہ کے متعلق جریدے نیوانگلینڈ جرنل آف میڈیسن میں ایک مضمون لکھا ہے جس میں انہوں نے بتایا ہے کہ چائے میں آگزالیٹ نامی کیمیکل پایا جاتا ہے جس کی بھاری مقدار پتھری کا سبب بنتی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ آئس ٹی کا شوقین مریض اس کے حد سے زیادہ استعمال کی وجہ سے اپنے گردوں سے ہاتھ دھو بیٹھا ہے اور خدشہ ہے کہ اسے تمام عمر ڈائلسز کے سہارے زندہ رہنا پڑے گا۔

مزید : تعلیم و صحت