ایٹمی معاہدے میں ابھی سے دراڑیں؟ایران اور امریکہ کے موقف میں تضاد سامنے آگیا

ایٹمی معاہدے میں ابھی سے دراڑیں؟ایران اور امریکہ کے موقف میں تضاد سامنے ...
ایٹمی معاہدے میں ابھی سے دراڑیں؟ایران اور امریکہ کے موقف میں تضاد سامنے آگیا

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) ایران اور مغربی طاقتوں کے درمیان طے پانے والے جوہری معاہدے کی ابھی سیاہی بھی خشک نہیں ہوئی کہ دونوں طرف سے اختلافی موقف سامنے آنا شروع ہوگیا ہے۔

امیر دبئی کا لندن میں 114 لگژری گاڑیوں، عملے کیلئے شاندار عمارت تعمیر کرنے کا فیصلہ

برطانوی جریدے ”میل آن لائن“ کے مطابق امریکا کا اسرار ہے کہ ایران پر عائد اقتصادی پابندیاں حتمی معاہدے کے بعد معطل کی جائیں گی یا مرحلہ وار ختم کی جائیں گی جبکہ ایران کے طے شدہ معاہدے سے پیچھے ہٹنے کی صورت میں پابندیاں دوبارہ عائد کرنے کے لئے فریم ورک موجود ہوگا۔ دوسری جانب ایرانی ٹی وی ”پریس ٹی وی“ کا کہنا ہے کہ تحریری معاہدے کے بعد ایران پر عائد اقتصادی پابندیاں فی الفور اٹھالی جائیں گی۔ امریکا اور ایران کے اختلافات معاہدے کے بعد کی جانے والی پریس کانفرنس میں ہی سامنے آگئے تھے جہاں ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے کہا کہ معاہدے کے ٹھوس شکل اختیار کرنے پر پابندیاں ختم کردی جائیں گی۔ انہوں نے بعد ازاں ٹویٹر پر لکھاکہ امریکا، برطانیہ، جرمنی، روس، چین اور فرانس کی طرف سے جاری کئے جانے والے بیان میں واضح طور پر کہا گیا ہے کہ امریکا جوہری معاملے سے متعلق عائد کی گئی تمام اقتصادی اور مالی پابندیاں ختم کردے گا۔

 جب امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کی نمائندہ میری ہارف سے امریکا اور ایران کے موقف میں اختلاف کے بارے میں سوال کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ وہ ایران کی طرف سے کئے جانے والے کسی بھی دعوے کے متعلق بات نہیں کرسکتی ہیں کیونکہ انہیں فارسی نہیں آتی۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...