لباس مختصر ترین لیکن قیمت کروڑوں میں کیونکہ۔۔۔

لباس مختصر ترین لیکن قیمت کروڑوں میں کیونکہ۔۔۔
لباس مختصر ترین لیکن قیمت کروڑوں میں کیونکہ۔۔۔

  

بیجنگ (نیوز ڈیسک) چین میں منعقد ہونے والے ایک منفرد فیشن شو میں شامل ماڈلز نے نہایت مختصر لباس کی نمائش کی لیکن غیر معمولی اختصار کے باوجود اس لباس کی قیمت ہوشربا حد تک زیادہ ہے۔

شمال مغربی صوبے شان شی کے شہر شیانگ میں منعقد کئے گئے فیشن شو میں ماڈلز نے سونے سے بنے زیر جاموں کی نمائش کرکے دیکھنے والوں کو حیرت میں مبتلا کردیا۔ دو اجزاءپر مشتمل زیر جاموں کی قیمت 40 ہزاربرطانوی پاﺅنڈ (تقریباً 61 لاکھ پاکستانی روپے) بتائی گئی ہے۔ سونے کا لباس پیش کرنے والے ڈیزائنرز کا کہنا ہے کہ اسے ماضی کی افسانوی شہزادیوں قلوپطرہ، میری انٹوئنٹ اور زرینہ الیگزینڈرا جیسی شخصیات سے متاثر ہوکر تیار کیا گیا ہے۔ مختصر لباس کے ساتھ سونے سے بنے ہوئے ہار اور جوتے بھی پیش کئے گئے ہیں۔

اس گاﺅں میں بینک ہے نہ پرائمری سکول لیکن ہر گھر کے دروازے پر سیکیورٹی کیمرہ موجود،وجہ انتہائی حیران کن

 منتظمین کا کہنا ہے کہ یہ لباس فروخت کے لئے نہیں بلکہ محض فن پارے کے طور پر پیش کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے ترکی کے جیولر احمت اتاکان سونے سے تیار کردہ لباس 85 ہزار برطانوی پاﺅنڈ (تقریباً ایک کروڑ 30لاکھ پاکستانی روپے) میں فروخت کرچکے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس