نئے بجٹ کے لئے چند تجاویز

نئے بجٹ کے لئے چند تجاویز

مکرمی ! وفاقی حکومت آئندہ مالی سال 2017-18ء کے وفاقی بجٹ میں سرکاری ملازمین کا ایڈہاک الاؤنس تنخواہ میں ضم کرکے تنخواہوں اور پنشن میں 10 سے 15 فیصد اضافے سمیت دیگر مراعات کا اعلان کرکے سرکاری ملازمین کو ریلیف فراہم کرے۔ سرکاری ملازمین کو ملنے والے میڈیکل الاؤنس، بارڈ ر ایریا الاؤنس، اردلی الاؤنس اور ہاؤس رینٹ سمیت دیگر الاؤنسز میں بھی خاطر خواہ اضافہ کیا جائے۔ مناسب ہوگا کہ گریڈ ایک سے 16 تک سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 15 اور گریڈ 17 سے اوپر ملازمین کی تنخواہوں میں 10 فیصد اضافہ کر دیا جائے۔ متذکرہ تجاویز کو عملی جامہ پہنانے سے سرکاری ملازمین یکسوئی کے ساتھ اپنے فرائض منصبی سرانجام دے سکیں گے جس سے سرکاری اداروں کی کارکردگی پر خوشگوار اثرات مرتب ہوں گے اور ان اداروں میں کرپشن کے رجحان میں بھی خاطر خواہ کمی ہوگی۔ ادھر پرائیویٹ اداروں کو بھی حکومت کے وضع کردہ لیبر رولز پر سختی کے ساتھ عملدرآمد کرنے کا پابند کیا جائے۔ اسی میں مفاد عامہ کا راز پنہاں ہے۔ حزب اقتدار و حزب اختلاف دونوں کو اپنے ریاستی اختلافات و مفادات کو پس پشت ڈال کر عوامی بہبود کی خاطر بجٹ سازی کے عمل میں بھرپور حصہ لینا چاہئے۔ وسیع تر قومی مفاد کی خاطر بجٹ کی تیاری کے عمل میں عوامی نمائندگان کی آرا کو مدنظر رکھا جائے۔ (سید جاوید علی شاہ، سیالکوٹ)

مزید : اداریہ


loading...