ذمہ دارانہ صحافت کیلئے ضروری ہے حق اور سچ پر مبنی خبریں عوام تک پہنچائی جائیں : مجیب الرحمن شامی

ذمہ دارانہ صحافت کیلئے ضروری ہے حق اور سچ پر مبنی خبریں عوام تک پہنچائی ...

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر) عمارتوں سے قومیں نہیں بنتیں بلکہ قوموں سے عمارتیں بنتی ہیں،طلبہ کو چاہئے کہ علم حاصل کریں اور سوچ و فکر کی عادت اپنائیں ۔قائد اعظم محمد علی جناح نے پاکستان کی بنیاد رکھتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان اسلام کی تجربہ گاہ ہو گی ۔علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے ذریعے طالب علموں کو ان کے گھر کی دہلیز تک تعلیم کی فراہمی ایک مثال ہے ۔ان خیالات کا اظہار روزنامہ پاکستان کے چیف ایڈیٹرمجیب الرحمنشامی نے ریجنل کیمپس علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی لاہور میں شعبہ ماس کمیونیکشن کے سیکنڈ سمسٹرکی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر گروپ ایڈیٹر کوارڈینیشن ایثار رانا ، گروپ ایگزیکٹو ایڈیٹر سٹی 42نوید چودھری، ریجنل ڈائریکٹر اے آئی او یو لاہور کیمپس رسول بخش بہرام اور ورکشاپ کوارڈینیٹر سینئر صحافی نصیرالحق ہاشمی بھی موجود تھے ۔ماس کمیونیکیشن کے طلبہ سے خطاب میں مجیب الرحمن شامی نے کہا کہ صرف نصابی کتابیں پڑھنے کا نام علم نہیں طلبہ کو چاہئے کہ وہ عصر حاضر سے مکمل آگاہی رکھیں اور مطالعے کی عادت کو اپنائیں ، آج طلبہ اپنی تاریخ سے واقفیت نہیں رکھتے ۔ماضی کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ماضی میں صحافت میں اتنا گلیمر نہیں تھا اسی لئے اس وقت کے طالب علم نیوز ایڈیٹر اور صحافی بننے کو ترجیح دیتے تھے لیکن موجودہ دور میں ماس کمیونیکیشن کے زیادہ تر طلبہ گلیمر کی چکا چوند سے متاثر ہو کر نیوز اینکر بننے کی خواہش رکھتے ہیں۔ ذمہ دارانہ صحافت کے لئے ضروری ہے کہ طلبہ حق اور سچ پر مبنی خبریں عوام تک پہنچائیں ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے نوید چودہری نے کہا کہ پاکستان کے ہر طبقہ تک تعلیم کو پہنچانے کا اوپن یونیورسٹی کا آئیڈیا لائق تحسین ہے جس سے عوام کی ایک بہت بڑی تعداد مستفید ہو رہی ہے اور یہ صحیح معنوں میں صدقہ جاریہ ہے ۔میڈیا میں جو گلیمر نظر آتا ہے حقیقت میں ایسا نہیں ہے، میڈیا میں بہت سے چیلنجز ہیں جو نئے آنے والوں کے لئے کٹھن ثابت ہوسکتے ہیں لیکن طلبہ کو چاہئے کہ وہ ہمت نہ ہاریں ۔انہوں نے کہا کہ صحافت دو دھاری تلوار ہے اس لئے اس فیلڈ میں آنے والے طلبہ کو چاہئے کہ وہ اپنی آنکھیں کھلی رکھیں ایسی رپورٹنگ سے اجتناب برتنا چاہئے کہ جس سے ملک میں منافرت بڑھے ۔ صحافت میں قومی مفادات کو مقدم رکھنا اولین ترجیح ہونا چاہئے ۔ایثار رانا نے اپنے خطاب میں کہا کہ بدقسمتی سے پاکستان بہت سی متضاد کیفیتوں کا ملک ہے جہاں صحافی کی عمر عام آدمی سے تین چار سال کم ہے ۔ صحافت آگ پر ماتم کرنے کا نام ہے اگر آپ نے صحافت کی طرف جانا ہے تو گلیمر سے نکلیں اور اپنے ضمیر کی آواز کو سنتے ہوئے حق اور سچ عوام تک پہنچائیں کیونکہ یہ زندگی عارضی ہے اور آپ کو روز محشر ایک ایک لفظ کا جواب دینا ہے ۔ رسول بخش بہرام نے کہا کہ اس وقت لاہور میں طلبہ کی انرولمنٹ ایک لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے ۔ علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی واحد تعلیمی ادارہ ہے جو علم کے پیاسوں کے پاس خود چل کر جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اوپن یونیورسٹی عام آدمی کی تعلیم کے ساتھ ساتھ جیل کے قیدیوں کو بھی بلا معاوضہ زیور تعلیم سے آراستہ کر رہی ہے تاکہ وہ علم حاصل کر کے جرائم سے توبہ کر یں اور معاشرے کے مفید شہری بن سکیں ۔ نصیر الحق ہاشمی نے معزز مہمانوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ملازمت پیشہ افراد کی ایک بہت بڑی تعداد اوپن یونیورسٹی میں تعلیم حاصل کر رہی ہے ،انہوں نے کہا کہ مہنگائی کے اس دور مین اوپن یونیورسٹی غریبوں کے لئے ایک نعمت ہے ۔تقریب کے اختتام پر مجیب الرحمٰن شامی نے ماس کمیونیکشن ڈیپارٹمنٹ کے طلبہ کو نعت خوانی اور مزاحیہ ٹیبلو پیش کرنے والے طلبہ میں انعامات تقسیم کئے ۔

مجیب الرحمنشامی

مزید : علاقائی


loading...