مغلپورہ چونگی روڈ :10سال میں 11افراد ٹرالر حادثات کی نذرہوگئے

مغلپورہ چونگی روڈ :10سال میں 11افراد ٹرالر حادثات کی نذرہوگئے

لاہور(خبرنگار) مغل پورہ چونگی روڈ پر گزشتہ 10 سال کے دوران ایک خاتون سمیت 11 افراد تیز رفتار ٹرالرز کی زد میں آ کر جاں بحق ہو چکے ہیں جبکہ بیس سے زائد لوگ زخمی ہونے پر مستقل طور پر مفلوج ہو چکے ہیں۔ پولیس اب تک کسی ایک ڈرائیور کو بھی گرفتار کر کے کیفر کردار تک پہنچا نہ سکی ہے۔ گزشتہ روز بھی ایک تیز رفتار ٹرالر نے تین بچوں کے باپ محمد اکرم کی جان لے لی۔ اس روڈ کو ٹریفک حادثات کے حوالے سے خونی روڈ کا نام دیا جا چکا ہے۔ حادثہ ہونے پر اس روڈ کے بارے شمالی چھاؤنی پولیس ، غازی آباد اور مغل پورہ پولیس آپس میں حدود کے تعین پر لڑتی رہتی ہیں۔ شہری اس سڑک سے گزرتے ہوئے خوف میں مبتلا رہتے ہیں۔ سٹی ٹریفک کے حکام نے آج تک اس بارے کسی قسم کی کوئی کارروائی نہیں کی ہے۔ مکینوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب اور آئی جی پولیس سمیت دیگر ارباب اختیار سے اپیل کی ہے کہ اس خونی روڈ کو ٹرالوں سے نجات دلائی جائے تاکہ شہریوں کی جانیں محفوظ رہ سکیں۔

حادثات

مزید : علاقائی


loading...