کسان پیکج ، رہن زمینوں کے انتقالات کی تصدیق کا اختیار سروس سنٹر انچارجزکے سپرد

کسان پیکج ، رہن زمینوں کے انتقالات کی تصدیق کا اختیار سروس سنٹر انچارجزکے ...

لاہور(اپنے نمائندے سے)کسان پیکج کے دوران رہن اور مرتن کی جانے والی زمینوں کے انتقالات کی تصدیق کا اختیار سروس سنٹر انچارجز کو دیا گیا ،سینئر ممبر بورڈ آ ف ریونیو پنجا ب نے نوٹیفکیشن جا ری کر دیا مزید معلوم ہوا ہے کہ بورڈ آف ریونیو پنجاب کے سینئر ممبر ڈاکٹر ثاقب عزیز نے گزشتہ روز سروس سنٹر انچارج کو سیکنڈ گریڈ کلکٹر کے اختیار دیتے ہوئے نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے نوٹیفکیشن نمبری 32/2017جاری کر دہ مورخہ 28مارچ 2017کے مطابق پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے سب سیکشن 2اورپنجاب لینڈ ریونیو ایکٹ 1967کے مطابق اب پنجاب کی 143تحصیلوں میں قائم سروس سنٹرز انچارجز کو کسان پیکج کے تحت کسانوں کی تیز ترین رہنمائی اور وقت کے ضیاء سے بچانے کے لئے ان کے تمام انتقالات کی تصدیق کے اختیا ر دے دیئے گئے ہیں ۔

جس کے بعد اب کسانوں کو اپنی زمینوں کو رہن او مرتن کیئے جانے کے بعد اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ کے پاس جانے کی بجائے ان کے انتقالات کی تصدیق اسی اراضی ریکارڈ سنٹر کے سروس سنٹر انچارج کر سکیں گے،ریونیو ذرائع کے مطابق کسان پیکج کا آغاز پنجاب حکومت کا ایک احسن اقدام تھا لیکن اس سلسلے میں پنجاب کے تمام کسانوں کو جو سب سے بڑی مشکل درپیش تھی وہ یہ تھی کہ جب وہ اپنی مرتن او ررہن کی جانے والی زمین کے انتقال کے لئے اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ کے پاس جاتے تھے تو اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ اضافی ڈیوٹیوں اور کام کے زیادہ بوجھ کے باعث آفس کسانوں کو وقت پر ریلیف فراہم نہ کر رہے تھے ،ایک طرف جہاں کسانوں کو بار بار چکر لگانے کے باعث شدید ذہنی کوفت کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا تو دوسری طرف پنجاب حکومت کی جانب سے کسان پیکج کے نام سے پنجاب کے ذرعی مالکان کو دیئے جانے والے ریلیف میں رکاوٹ اور ان کی جانب سے فراہم کی جانے والی خدمات میں تعطل آرہا تھا جس کی شکایات اور بار بار پنجاب کے کثیر کسانوں نے سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو اور پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل پنجاب کیپٹن (ر)ظفر اقبال کو کی تھیں ،کسانوں کی ان شکایات کے ازالے کے پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل کیپٹن(ر)ظفر اقبال کی خصوصی کاوش سے گزشتہ روز سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوے اسسٹنٹ کلکٹر درجہ دوئم کے اختیارات صرف مرتن اور رہن کی جانے والی زمینوں کے انتقالات کی تصدیق کی حد تک دے دیئے گئے ہیں ۔بورڈ آف ریونیو کے ترجمان نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت کی جانب سے کسان پیکج کے تحت پنجاب بھر کے کسانوں کے دیئے جانے والا ریلیف بلاتعطل جاری رہے گا ،تمام سروس سنٹر انچارجز کو اسسٹنٹ کلکٹر درجہ دوئم کے اختیارات دینے کا مقصد تمام کسانوں کو تمام خدمات ایک ہی چھت تلے فراہم کرنا ہے،جس میں کسی حد تک کامیابی حاصل کر لی گئی ہے اور کسانوں کی جانب سے بھی اس اقدام کو بھرپور سراہا گیا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...