بونیر ،ڈی ایچ کیو ڈگر کے ملازمین کی ہڑتال ،مریض رل گئے

بونیر ،ڈی ایچ کیو ڈگر کے ملازمین کی ہڑتال ،مریض رل گئے

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)ہیلتھ فروفیشنل الاونس نے ملنے کے خلاف ڈی ایچ کیو ڈگر میں ہڑتال ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ڈگر میں مریضوں کا برا حال ،ملازمین کی ہڑتال کی وجہ سے او پی ڈی ،او ٹی سمیت ٹیکنیکل سٹاف کی جانب سے پانی کی بندش کی وجہ سے ائے ہوئے مریضوں کو شدید تکلیف کاسامنا ،حکو مت پہلے اپنے ملازمین کے جائیر مطالبات تسلیم کرے ،ہم دور دراز علا قوں سے ائے ہے ۔ہڑتال کی وجہ سے واپس جانے پر مجبور ہے ،اگریہ تبدیلی ہے تو ہمیں نیا پاکستان کی بجائے پرانا پاکستان قبول ہے ،مریضوں کی ہمارے نمایئندہ بات چیت ،تفصیلات کے مطابق صوبائی ایسوسی ایشن کے حکم پر 3 اپریل سے 6 اپریل تک ہیلتھ پروفیشنل الاونس نہ ملنے کے خلاف ہیڈ کوارٹر ڈگر میں آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن ،ٹیکنکل سٹاف ،پیر امیڈیکل درجہ چہارم اور ڈرائیو رز کی جانب سے مکمل تالہ بند ہڑتال کی گئی ،ڈیوٹی ٹائم شروع ہوتے ہی یونین کے رہنماؤ ں نے دفاتر کو تالے لگانا شروع کئے ،جس کی وجہ سے ہسپتال کی او پی ڈی ،او ٹی ،ایکسرے اور دیگر کو بند کردیا گیا ،یو نین رہنماؤں کے صدور بختی رحمان ،ٹیکنکل سٹاف ملاکنڈ ڈویژن کے صدر نصیب رحیم ،جنرل سیکرٹری محمد اسلم سوات اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ صوبائی حکومت اور صوبائی وزیر صحت نے ہیلتھ فروفیشنل الاونس بند کرکے ہم سے جینے کا حق چھین لیا ہے ،صوبائی قائیدین کے حکم پر اج ہم نے ہیڈکوارٹر ہسپتال میں مکمل تالہ بند ہڑتال کیا ہے ،اور چھ اپریل تک ہڑتال جاری رہیگا ،اگر ہمارے جائیز مطالبے کو تسلیم نہ کیا گیا تو صوبہ بھر کے ہزاروں ملازمین وزیر اعلی ہاوس کے سامنے دھرنا دینگے اور اس وقت تک دھرنا دینگے جب تک ہمار مطالبہ منظور نہیں ہوتا ۔ہسپتال کو دور دراز سے ائے ہوئے مریضوں اور انکے لواحقین نے ہمارے نمائندہ کو بتایا کہ اگر یہ عمران خان کی تبدیلی ہے تو ہمیں یہ تبدیلی نہیں چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی پہلے اپنے ملازمین کے جائیز مطالبات حل کرے بعد میں تبدیلی لائے ۔انہوں نے کہا کہ ہم غریب ہے اور پرائیویٹ میڈیکل سنٹرز میں ڈاکٹر ز کے فیس برداشت نہیں کرسکتے ،جبکہ سرکاری ہسپتالوں میں ائے روز ملازمین ہڑتالوں پر ہوتے ہے ۔اخر ہم کہاں جائے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...