عدالتی ملازمین نوکریاں عبادت سمجھ کر سرانجام دیں،جسٹس منصورعلی

عدالتی ملازمین نوکریاں عبادت سمجھ کر سرانجام دیں،جسٹس منصورعلی

اٹک(شہزاد انجم بٹ سے) عدالت عالیہ کے ملازمین اپنی نوکریوں کو عبادت سمجھ کر اپنے فرائض سر انجام دیں ، چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ، اٹک کے دورہ کے موقع پر ان کے ہمراہ لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس فرخ عرفان خان ، رجسٹرار ہائی کورٹ سید خورشید انور رضوی بھی موجودتھے،سیشن کورٹ اٹک آمد پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج اٹک سہیل ناصر ، ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز ، سول ججز ، ڈی پی او اٹک زاہد نواز مروت کے علاوہ دیگر متعلقہ افسران نے ان کا استقبال کیا ہے، بعدازاں چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کو گارڈآف آنر پیش کیا گیا ، سیشن کورٹ اٹک کے سبزہ زار میں چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ نے ڈسٹرکٹ اٹک کی عدلیہ کے ملازمین سے خطاب کیاہے، خطاب کرتے ہوئے جسٹس منصور علی شاہ نے کہا کہ عدالت عالیہ ملازمین کے مسائل سے بخوبی آگاہ ہے اور اس ضمن میں خصوصی اقدامات کیے جارہے ہیں جن کے ثمرات بہت جلد ملازمین تک پہنچیں گے، انہوں نے سیشن کورٹ اٹک کے ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی نوکریوں کو عبادت سمجھ کر اپنے فرائض سرانجام دیں، تاکہ عوام الناس کے لیے زیادہ سے زیادہ آسانیاں پیدا کی جاسکیں، انہوں نے کہا کہ عدالت عالیہ ایسے ملازمین کی قدر کرتی ہے جو اپنا کام ایمانداری اور جانفشانی سے سرانجام دیتے ہیں،چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سید منصور علی شاہ نے کہا کہ عدالت عالیہ ملازمین کی سہولیات کے لیے کام کررہی ہے اور ان کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیے جارہے ہیں، اس موقع پر چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے ملازمین کے مسائل سنے اور انہیں جلد حل کرنے کی یقین دھانی کروائی، بعدا زاں سیشن کورٹ اٹک کے سبزہ زار میں چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ نے فائیکس کا پودا لگا کر شجرکاری مہم کا افتتاح کیاہے، چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سید منصور علی شاہ نے سیشن کورٹ کے کمیٹی روم میں ضلع اٹک کی عدلیہ کے افسران کے اجلاس کی صدارت کی، اجلاس میں ان کے ہمراہ لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس فرخ عرفان خان ، رجسٹرار ہائی کورٹ سید خورشید انور رضوی ،ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج اٹک سہیل ناصر کے علاوہ ضلع بھر کے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز ، سینئر سول ججز اور سول ججز بھی موجود تھے۔اجلاس میں ضلع بھر میں جاری عدلیہ کے کام کے حوالے سے تفصیلی جائزہ لیا گیا اور اس بات کی ہدایت کی گئی کہ عدلیہ میں زیر سماعت مقدمات کا جلد فیصلہ کرکے اس کے ثمرات عوام تک پہنچائے جائیں ۔ انہوں نے عدلیہ کے افسران کو ہدایت کی کہ وہ قانون کی عملداری کو یقینی بنائیں تاکہ ایک پرسکون عوامی معاشرے کا قیام عمل میں لایا جاسکے ۔ چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ نے کہا کہ بروقت انصاف ہی انصاف کے تقاضوں کو پورا کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ بھر میں جاری مقدمات کے فیصلوں کا روزانہ کی بنیاد پر جائزہ لیا جارہا ہے اور صوبہ بھر کے جوڈیشل افسران کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ بروقت انصاف فراہم کرنے کے سلسلے میں اپنا کردار ادا کریں تاکہ عوام تک بروقت اور انصاف کے حصول کے لیے کیے جانے والے اقدامات کے ثمرات پہنچ سکیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...