کے ایم سی ملازمین کوتنخواہوں کی عدم ادائیگی ، سیکرٹری خزانہ سے جواب طلب

کے ایم سی ملازمین کوتنخواہوں کی عدم ادائیگی ، سیکرٹری خزانہ سے جواب طلب

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ نے کے ایم سی اور ڈی ایم سی کے ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن کی عدم ادائیگی کے خلاف دائر درخواست پر سیکرٹری خزانہ سے 19اپریل تک جواب طلب کرلیا ہے ۔پیر کوسندھ ہائیکورٹ کے دو رکنی بینچ کی عدالت میں کے ایم سی اور ڈی ایم سیز کے ملازمین کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ 7 مارچ 2013 کو سندھ ہائیکورٹ کے چیف جسٹس نے یہ حکم دیا تھا کہ جب تک نیا پی ایف سی ایوارڈ نہیں آجاتاکے ایم سی کو50 کروڑ کی اسپیشل گرانٹ دی جائے ۔سیکریٹری بلدیات نے 2016 میں 20 کروڈ کے ڈی اے اور 30 کروڑ کے ایم سی کو دیئے جو کہ عدالتی حکم کی خلاف ورزی کے زمرے میں آتا ہے۔ عدالت نے سیکریٹری بلدیات پر برہمی کا اظہار کیا ۔عدالت نے سیکریٹری خزانہ سے تنخواہوں سے متعلق تمام تفصیلات طلب کرتے ہوئے 19 اپریل کو سیکریٹری بلدیات کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم دیتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...