پی ڈی اے ملازمین کو کوٹہ میں پلاٹ نہ دینے پر جواب طلب

پی ڈی اے ملازمین کو کوٹہ میں پلاٹ نہ دینے پر جواب طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس لعل جان خٹک اور جسٹس عبدالشکورپرمشتمل دورکنی بنچ نے پی ڈی اے ملازمین کو کوٹے کے تحت حیات آباد میں پلاٹ الاٹ نہ کرنے پر سیکرٹری لوکل گورنمنٹ اورڈی جی پی ڈی اے کونوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز درخواست گذار ظہیراللہ وغیرہ کی جانب سے دائررٹ پٹیشن پرجاری کئے اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار پی ڈی اے کے گریڈ 11 تا گریڈ16کے ملازمین ہیں اوران ملازمین کی پنشن اوردیگرمراعات نہیں ہوتی تاہم حکومت نے ملازمین کیلئے سرکاری رہائشی منصوبے میں2فیصدپلاٹ مختص کررکھے ہیں حکومت نے حیات آباد کی بجائے ریگی للمہ ٹاؤن شپ میں پلاٹ مختص کئے تھے جس کے خلاف جس کے خلاف ملازمین نے پشاورہائی کورٹ میں رٹ دائرکی تھی اورہائی کورٹ نے2013ء صوبائی حکومت کوملازمین کو ریگی للمہ ٹاؤن شپ کی بجائے حیات آباد میں پلاٹ الاٹ کرنے کی ہدایت کی تھی لیکن اتنے سال گذرنے کے باوجود ان کامسئلہ حل نہیں ہورہا ہے جبکہ صوبائی حکومت کے اعلی حکام اس پرآمادہ بھی ہوچکے ہیں اس کے باوجود عدالتی فیصلے پرعملدرآمد نہیں کیاجارہا ہے فاضل بنچ نے ابتدائی دلائل کے بعد سیکرٹری لوکل گورنمنٹ اورڈی جی پی ڈی اے کونوٹس جاری کرکے جواب مانگ لیاکہ 2013ء کے عدالتی احکامات پرعملدرآمد کیوں نہیں کیاجارہا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...