چارسدہ میں دیر سے تعلق رکھنے والے دو سگے بھائیوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا

چارسدہ میں دیر سے تعلق رکھنے والے دو سگے بھائیوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا

چارسدہ (بیورورپورٹ)اتمانزئی میں خون کی ہولی ۔دیر سے تعلق رکھنے والے دو جوان سال سگے بھائی قتل ۔ مقتولین کی عمریں 18اور 20سال کے درمیان ہیں ۔ والدہ نے دہرے قتل کیس میں دعویداری سے انکار کر دیا ۔ کسی سے کوئی دشمنی یا عناد نہیں ۔ والدہ کا بیان ۔مقتولین کا بھائی پر اسرار طور پر غائب ۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی کے حدود اتمانزئی بیلاگئی میں نامعلوم افراد نے گھر میں گھس کر دو جوان سال بھائیوں فہیم اور بلال پسران قمر زمان کو قتل کر دیا ۔سٹی پولیس کے ایس ایچ او ولائت خان نے اطلاع ملنے پر نعشوں کو قانونی کاروائی اور پوسٹ مارٹم کیلئے ڈی ایچ کیو ہسپتال چارسدہ منتقل کیا ۔ پولیس ذرائع کے مطابق مقتولین کی والدہ نے دہرے قتل کی دعویداری سے انکار کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ ان کی کسی سے دشمنی اور عناد نہیں ۔مقتولین کے والد چند سال پہلے وفات پا چکے ہیں ۔ پولیس ذرائع کے مطابق مقتولین کا بھائی قیوم واقعہ کے بعد غائب ہو چکے ہیں اور بھائیوں کے جنازے میں بھی شریک نہیں ہوئے جبکہ اس حوالے سے ان کے والدہ کا موقف ہے کہ وہ راولپنڈی میں مقیم ہے ۔ پولیس ذرائع کے مطابق مقتولین کی والدہ اصل حقائق چھپا رہی ہے اور شائد دو جوان بیٹو ں کے قتل کے بعد اپنے تیسر ے بیٹے کو قانون کے گرفت سے بچانے کی کوشش کر رہی ہے مگر پولیس بہت جلد اصل حقاق سے پردہ اٹھائیگی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...