’جب میں مرجاﺅں تو میری لاش کو یہ انجیکشن لگادینا تاکہ۔۔۔‘ 95 سال کی عمر میں وفات پانے والے بزرگ کی وصیت سامنے آگئی، اس میں ایسی فرمائش کردی جو آج تک کسی انسان نے نہ کی، ڈاکٹر بھی پریشان ہوگئے

’جب میں مرجاﺅں تو میری لاش کو یہ انجیکشن لگادینا تاکہ۔۔۔‘ 95 سال کی عمر میں ...
’جب میں مرجاﺅں تو میری لاش کو یہ انجیکشن لگادینا تاکہ۔۔۔‘ 95 سال کی عمر میں وفات پانے والے بزرگ کی وصیت سامنے آگئی، اس میں ایسی فرمائش کردی جو آج تک کسی انسان نے نہ کی، ڈاکٹر بھی پریشان ہوگئے

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) معروف برطانوی گلوکار اور ریڈیو میزبان جمی ینگ گزشتہ سال 7نومبر کو95برس کی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔ اب ان کی وصیت منظرعام پر آئی ہے جس میں انہوں نے ایک انتہائی حیران کن چیز درج کر رکھی تھی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق جمی ینگ نے اپنی وصیت میں لکھ رکھا تھا کہ ”جب میری موت واقع ہوجائے تو اس کے بعد مجھے دفن کرنے سے قبل زہریلا انجکشن لگایا جائے تاکہ میری موت کی تسلی ہو سکے۔“

وہ آدمی جس نے اپنی موت کا ڈرامہ رچایا تاکہ دیکھ سکے اس کے جنازے پر کتنے قریبی دوست آتے ہیں، نتیجہ ایسا نکلا کہ وہ کبھی تصور بھی نہ کرسکتا تھا

ان کی موت کے بعد زہریلا انجکشن لگانے کی وصیت سے معلوم ہوتا ہے کہ انہیں خدشہ لاحق تھا کہ کہیں انہیں غلطی سے مردہ قرار دے کر زندہ ہی دفن نہ کر دیا جائے۔تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ ان کی اس وصیت پر عملدرآمد کیا گیا تھا یا نہیں۔وصیت سے معلوم ہوا ہے کہ ریڈیو 2ڈی جے نے پسماندگان کے لیے 27لاکھ پاﺅنڈ (تقریباً 35کروڑ 17لاکھ روپے) کی جائیداد چھوڑی تھی۔جس کا بیشتر حصہ انہوں نے اپنی تیسری بیوی الیشا ینگ کے نام کیا جو موت کے وقت ان کے ساتھ تھی۔ اس کے علاوہ انہوں نے اپنی پہلی بیوی سے پیداہونے والی بیٹی لزلے کیپلن کے لیے بھی 50ہزارپاﺅنڈ ترکے میں چھوڑے۔جمی ینگ سابق برطانوی وزیراعظم تھیچر کے پسندیدہ ریڈیومیزبان تھے۔ وہ 14بار ان کے شو میں بطور مہمان شریک ہوئی تھیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...