سرِ لامکاں سے طلب ہوئی، سوئے منتہا وہ چلے نبی ﷺ، آج شب معراج عقیدت و احترام سے منائی جارہی ہے

سرِ لامکاں سے طلب ہوئی، سوئے منتہا وہ چلے نبی ﷺ، آج شب معراج عقیدت و احترام ...
سرِ لامکاں سے طلب ہوئی، سوئے منتہا وہ چلے نبی ﷺ، آج شب معراج عقیدت و احترام سے منائی جارہی ہے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) محبوبِ کبریا ﷺ کی خالق کائنات سے ملاقات کی رات ، جب اللہ نے اپنے بندے کو پہلے مسجدِ اقصیٰ ، پھر آسمانوں کی سیر کرائی ، عرش پر روبرو ملاقات میںنمازوں کا تحفہ دیا۔ آج مسلم امہ انتہائی عقیدت و احترام کے ساتھ شب معراج منا رہی ہے۔

شب معراج کا واقعہ اعلانِ نبوت کے پانچویں سال پیش آیا جب فرشتوں کے سردار حضرت جبرائیلؑ انبیا ءکے سردار کے پاس آئے اور عرض کی ’ اے اللہ کے رسول ﷺ ، آپ کا رب آپ سے ملاقات کا خواہشمند ہے‘۔ حضور اکرم ﷺ براق پر بیٹھ کر مسجد حرام سے مسجد اقصیٰ گئے جہاں تمام انبیا کرام علیہم السلام نے آپ کی قیادت میں دوگانہ ادا کیا۔ جس کے بعد حضورﷺ تمام آسمانوں پر مختلف انبیا کرامؑ سے ملاقاتیں کرتے ہوئے عرشِ معلیٰ پر پہنچے اور اللہ کے حضور پیش ہوئے۔ اللہ اور اس کے محبوب کی اس روبرو ملاقات میں امتِ محمدیہ کیلئے پانچ نمازوں کا تحفہ عطا کیا گیا۔

پاکستان سمیت دنیا بھر میں مسلمان اسی رات کی نسبت سے شب معراج مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ مناتے ہیں۔ مساجد پر چراغاں کیا جاتا ہے اور خصوصی محافل بھی منعقد ہوتی ہیں جن میں سیرتِ نبوی ﷺ اور واقعہ معراج پر روشنی ڈالی جاتی ہے۔ مسلمان اس رات خصوصی عبادات بھی کرتے ہیں۔

مزید : اہم خبریں /روشن کرنیں