کرونا، رمضان ٹورنامنٹس کا انعقاد مشکل، بیروزگار کرکٹرز کو دھچکا

  کرونا، رمضان ٹورنامنٹس کا انعقاد مشکل، بیروزگار کرکٹرز کو دھچکا

  

لاہور (سپورٹس رپورٹر) ڈیپارٹمنٹل کرکٹ ٹیمیں بند ہونے ملک کے درجنوں کرکٹرز بیروزگار ہونے کے بعد شدید مالی مشکلات کا شکار ہیں اور گھروں کے چولہے بجھنے کے بعد وہ چھوٹی موٹی ملازمتوں پر مجبور ہوگئے ہیں ایسے میں ان کے لیے ایک اور بری خبر یہ ہے کہ کورونا وائرس کے سبب اس سال دو درجن سے زائد رمضان ٹورنامنٹس خطرات سے دوچار ہیں جس سے کرکٹرز کو لاکھوں روپے کا نقصان ہوگا۔محتاط اندازے کے مطابق ٹیسٹ کرکٹرزکامران اکمل، عمر اکمل، وہاب ریاض، سرفراز احمد، محمد سمیع، فواد عالم،انورعلی وغیرہ جیسے بڑے کرکٹرز کو ایک ماہ میں تین سے پانچ لاکھ جبکہ چھوٹیفرسٹ کلاس کرکٹرز کو ڈیڑھ لاکھ سے 50ہزار کی ا?مدنی ہوتی تھی جسیعیدی کہا جاتا تھا۔ کراچی میں سالہا سال سے رمضان کے دوران پوری رات کرکٹ کا میلہ سجتا ہے۔پاکستان کے سابق کپتان اور معین خان اکیڈمی کے روح رواں معین خان کہتے ہیں ابھی تک ہم نے رمضان کرکٹ ٹورنامنٹ کی تیاری شروع نہیں کی ہے اور لگ رہا ہے کہ اس سال ہم رمضان ٹورنامنٹ نہیں کرسکیں گے۔ واضح رہے کہ ڈپارٹمنٹس کی ٹیمیں بند ہونے سے کراچی کے کئی کھلاڑی ریڈیو موٹر سائیکل سروس،ریڈیو ٹیکسی اور پک اپ وغیر ہ چلا کر گھروں کا خرچہ چلارہے تھے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -