صنعتوں کے تحفظ کیلئے 100ارب کے ری فنڈز کی ادائیگی کردی: مشیر خزانہ

صنعتوں کے تحفظ کیلئے 100ارب کے ری فنڈز کی ادائیگی کردی: مشیر خزانہ

  

اسلام آباد (این این آئی)وفاقی حکومت نے ری فنڈز کی ادائیگی کیلئے 100 ارب روپے جاری کردئیے ہیں۔جمعہ کویہاں جاری بیان میں مشیر خزانہ عبد الحفیظ شیخ نے کہاکہ کروناوائرس کی وباء کے اثرات سے نمٹنے کیلئے وزیراعظم کی طرف سے اعلان کردہ 1240 ارب روپے کے امدادی پیکج کے تحت فنانس ڈویژن نے ٹیکس ری فنڈز کی ادائیگی کے ضمن میں دواپریل تک 100 ارب روپے جاری کئے ہیں۔ مشکل کے اس وقت میں تجارت اورروزگارکے تحفظ کیلئے یہ موجودہ حکومت کے ایسے اقدامات ہیں جن کی ماضی میں مثال نہیں ملتی۔ ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ بڑے پیمانے پرٹیکس ری فنڈکی ادائیگی کی گئی ہے۔حکومت کے امدادی پیکج کا مقصدصنعتوں کوسرمایہ کی فراہمی میں مشکلات اورچیلنجوں پرقابوپانے میں مددفراہم کرناہے۔سرمایہ کی فراہمی میں بہتری سے کمپنیوں کواپنے ملازمین کوبروقت تنخواہوں کی ادائیگی میں مدد ملے گی۔ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا کہ 31 مارچ 2020ء تک کے تمام ٹیکس ری فنڈز کی ادائیگی ہوگئی ہے جن میں غیربرآمدی شعبے کوجی ایس ٹی ری فنڈ کی مدمیں 52 ارب روپے کی ادائیگی شامل ہے۔برآمدی صنعتوں کوفاسٹرنظام کے تحت 10 ارب روپے دئیے گئے ہیں، ڈیوٹی ڈرابیک کی مد میں 15 ارب روپے کی ادائیگی کی گئی ہے۔مقامی ٹیکسوں اورلیویزکے ڈرابیک (ڈی ایل ٹی ایل) کی مد میں 20.5 ارب روپے جاری کئے گئے ہیں۔انہوں نے کہاکہ جاری مالی سال کے دوران ٹیکس ری فنڈز کی مدمیں کل 163 ارب روپے جاری کئے گئے، یہ شرح گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلے میں 61.4 فیصدزیادہ ہے۔گزشتہ مالی سال کے ابتدائی 9 ماہ میں اس مدمیں کل 101 ارب روپے جاری کئے گئے تھے۔

مشیر خزانہ

مزید :

پشاورصفحہ آخر -