کرونا کیس پازٹیو‘ میلسی میں سخت اقدامات کا فیصلہ‘ مشاورت شروع

  کرونا کیس پازٹیو‘ میلسی میں سخت اقدامات کا فیصلہ‘ مشاورت شروع

  

میلسی(تحصیل رپورٹر)تحصیل میلسی میں کورونا وائرس کے سب سے زیادہ کیس پازیٹو آنے کے بعد ضلعی انتظامیہ نے میلسی میں مزید سخت انتظامات کا فیصلہ کرلیا لاک ڈاؤن کے دوران بلا ضرورت گھروں سے باہر نکلنے والے شہریوں کیخلاف کریک ڈاؤن کی مشاورت شروع کر دی۔تفصیل کیمطابق ضلعی انتظامیہ نے تبلیغی مرکز میلسی سے تبلیغی جماعت کے (بقیہ نمبر61صفحہ6پر)

8 افراد کے کورونا وائرس ٹیسٹ پازیٹو آنے کے بعد سخت اقدامات کا فیصلہ کر لیا ہے گذشتہ دنوں تبلیغی مرکز میلسی سے 20 افراد کے کورونا وائرس ٹیسٹ لیئے گئے جن میں سے ابوبکر کالونی کالونی چوک میلسی کے رہائشی نذیر احمد، شمالی وزیر ستان کے رہائشی ہجرت اللہ، ضلع شانگلہ کے رہائشی یٰسین سید، مظفر آباد کے رہائشی ممتاز احمد، ضلع ہنگو کے رہائشی انور سلیم اور فدا محمد جبکہ ضلع مردان کے رہائشی فرید اللہ اور وحید الدین کے کورونا وائرس ٹیسٹ پازیٹو آ گئے اور اس جماعت کے ارکان میلسی، نواحی موضع کوٹ ہرو، محمد شاہ، اڈا سورو موڑ، موضع غوث پور، گھلو، فتح پور، گنیش پور کے علاقوں میں موجود رہے جس کی وجہ سے ان علاقوں کے افراد کے متاثر ہونے کے خدشات بھی سامنے آ رہے ہیں اس سے قبل راولپنڈی میں تبلیغی جماعت کے ساتھ وقت گزارنے والے نواحی قصبہ کوٹ مظفر کے 2 افراد محمد راشد اور محمد اشرف بھی سامنے آ چکے ہیں جبکہ وہاڑی سے ایک تبلیغی جماعت کے رکن کا کورونا ٹیسٹ پازیٹو آنے کے بعد معلوم ہوا ہے کہ اس نے آخری تبلیغی دورہ تحصیل میلسی کے نواحی قصبہ شتاب گڑھ میں کیا اسی طرح ایران سے آنے والے زائرین میں سے 30 افراد قصبہ ٹبہ سلطانپور اور نواحی علاقوں کے رہائشی ہیں جنہیں ضلعی انتظامیہ نے 14یوم کیلئے دانش سکول میں قائم کیئے گئے قرنطینہ سنٹر میں رکھا ہوا ہے اس صورتحال کے سامنے آنے کے بعد تحصیل میلسی میں کورونا وائرس کے حوالے سے نازک صورتحال سامنے آ چکی ہے جس پر ضلعی انتظامیہ نے لاک ڈاؤن کو مزید موثر بنانے کیلئے شہریوں کے زیادہ سے زیادہ گھروں میں رہنے کو یقینی بنانے کیلئے سخت اقدامات کا فیصلہ کیا ہے اور بلا ضرورت گھروں سے باہر نکلنے والے شہریوں کی گرفتاری سمیت دیگر اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے جبکہ دوسری جانب ضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کی ٹیموں نے تبلیغی جماعت کے متاثرہ افراد کے تبلیغی دوروں کے مقامات اور ملنے والے افراد کے بارے میں معلومات اور ان علاقوں میں حفاظتی اقدامات کا آغاز کر دیا ہے۔

مشاورت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -