لاک ڈاؤن، مزدور سب سے زیادہ متاثر کیا، امداد مرنے کے بعد ملے گی؟ غریبوں کی آہیں

  لاک ڈاؤن، مزدور سب سے زیادہ متاثر کیا، امداد مرنے کے بعد ملے گی؟ غریبوں کی ...

  

کوٹ ادو‘ ساہوکا‘ ہارون آباد‘ جام پور (تحصیل رپورٹر‘نمائندہ پاکستان‘ نامہ نگار) کوروناوائرس سے نمٹنے کیلئے کوٹ ادومیں لاک ڈاؤن کا13واں روز ہے، دفعہ 144 کے نفاذکو یقینی بنانے کیلئے کوٹ ادو، دائرہ دین پناہ چوک سرور شہید اور سنانواں میں نماز جمعہ پر پولیس سخت سیکورٹی انتظامات سخت، لاک ڈاؤن پر مکمل عملدرآمدکرانے کیلئے ڈی ایس پی اعجاز حسین بخاری کی ہدایت پر پولیس متحرک ہو گئی،شہر(بقیہ نمبر9صفحہ6پر)

کے داخلی اور خارجی راستوں پر پولیس اہلکاروں کا ناکہ لگا رہا، بازار، شاپنگ مالز، نجی و سرکاری ادارے، پبلک ٹرانسپورٹ، ریسٹورنٹس، پارک اور سیاحتی مقامات سمیتتمام مارکیٹیں بھی بندرہیں،اس موقع پر ڈی ایس پی اعجاز حسین بخاری نے تمام پولیس چیک پوائنٹس کا معائنہ بھی کیا۔ ایس ایچ او فتح شاہ انسپکٹر ناصر محمود کی سربراہی میں دفعہ 144کی خلاف ورزی پر فتح شاہ پولیس نے اللہ بخش،ریاض احمد،محمد مزمل،صغیر احمد،ناصر،حمزہ،ابوبکر،ابوحریرہ،قمر زمان،حامیم،ظہور احمد کے خلاف مقدمات کا اندراج کر لیا ہے ہارون آباد میں کورونا وائرس کے تدارک کیلئے حکومت پنجاب کا لاک ڈاؤن 12ویں روز میں داخل ہوگیا ہے،بازار بند اور سڑکوں پر آمد و رفت انتہائی کم ہے،کاروباری بازار اور دکانیں آج بھی لاک ڈاؤن کے باعث بند ہیں۔حکومت پنجاب نے جنرل اسٹورز، کریانہ اسٹورز، گوشت، سبزی کی دکانیں 5بجے بند کرنے کی ہدایت کی ہے،لوگوں کا کہنا ہے کہ حکومت کے لاک ڈاون پر عوام تعاون کر رہی ہے مگر غریبوں تک حکومت کی مدد نہیں پہنچ رہی، لاک ڈاون میں سفید پوش اور دیہاڑی دار طبقہ سب سے زیادہ متاثر ہو رہا ہے، جس پر شہر کے مخیر شخصیات کی جانب سے دیہاڑی دار اور سفید پوش طبقے کی مالی امداد اور راشن تقسیم کرنے کا سلسلہ بھی جاری ہے،لاک ڈاؤن پر عملدرآمد کیلئے قانون نافذ کرنے والے ادارے بھی شہر بھر میں متحرک نظر آرہے ہیں۔ تحصیل جام پور میں مکمل لاک ڈاؤن کاروبار زندگی معطل ہوکر رہے گئی ایک تو

لگام اشیاء خوردونوش ادویات گیس لکڑی و دیگر ضروریات زندگی کی اشیاء پر ناجائز منافع خور عوام کا خون چوسنے لگے اس لاک ڈاؤن میں رہی سہی کسر تحصیل انتظامیہ نے پوری کر دی کسی ناجائز منافع خور سے آج نہیں پوچھا کہ آپ لوگوں نے اتنی مہنگائی کیوں کر رکھی ہے دریں اثناء شہریوں حافظ شفقت حسین، ملک فرحان، کلیم اللہ، شاہد حسین ملک سچل بہزاد ندیم احمد شاہ زیب اقبال ملک انس سمیت دیگر نے کمشنر ڈی جی خان ڈی سی راجن پور سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اشیاء خوردونوش و دیگر ضروریات زندگی کی اشیاء مہنگی فروخت کرنے والوں کے خلاف سختی نمٹا جائے۔ جبکہ مستحقین نے کہا ہے کہ انتظامیہ ہمیں مرنے کے بعد امداد دے گی وزیراعظم اس حوالے سے فوری طور پر نوٹس لیں۔

لاک ڈاؤن

مزید :

ملتان صفحہ آخر -