برطانیہ میں پاکستانی نرس کی موت، آخری لمحات میں ڈاکٹرز کو نظر انداز کر کے شوہر نے گلے لگا لیا، آخری بات کیا کہی؟ جان کر دل افسردہ ہوجائے

برطانیہ میں پاکستانی نرس کی موت، آخری لمحات میں ڈاکٹرز کو نظر انداز کر کے ...
برطانیہ میں پاکستانی نرس کی موت، آخری لمحات میں ڈاکٹرز کو نظر انداز کر کے شوہر نے گلے لگا لیا، آخری بات کیا کہی؟ جان کر دل افسردہ ہوجائے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک پاکستانی نژاد نرس کورونا وائرس کے خلاف جنگ لڑتے ہوئے جان کی بازی ہار گئی۔ اس کی زندگی کے آخری لمحات میں اس کے شوہر نے ڈاکٹروں کی تنبیہ کو نظرانداز کرتے ہوئے اپنی اہلیہ کو گلے لگا لیا اور ایسی بات کہی کہ سن کر آنکھیں نم ہو جائیں۔ میل آن لائن کے مطابق 36سالہ اریمہ نسرین کو ہسپتال میں فرائض سرانجام دیتے ہوئے کورونا وائرس لاحق ہوا تھا۔ اس کی حالت تشویشناک ہونے پر اسے ویسٹ مڈلینڈز کے ویلسال مینور ہسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ منتقل کیا گیا لیکن وہ جانبر نہ ہو سکی۔

رپورٹ کے مطابق اریمہ تین بچوں کی ماں تھی۔ گزشتہ روز اس کی موت سے کچھ دیر قبل اس کا شوہر اس کے کمرے میں گیا اور اسے گلے لگا کر اس کے کان میں سرگوشی کرتے ہوئے کہا کہ ”بچوں کی فکر مت کرنا۔“یہ آخری فقرہ تھا جو وہ اپنی اہلیہ کو کہہ سکا، اس کے کچھ دیر بعد اریمہ کی روح قفس عنصری سے پرواز کر گئی۔ اریمہ کی 31سالہ بہن ایش کا کہنا تھا کہ ”میرے بہنوئی کو ڈاکٹروں نے منع کیا کہ وائرس کی وجہ سے وہ اس کے قریب نہیں جا سکتا اور گلے نہیں لگا سکتا لیکن اس نے انکار کر دیا اور کہا کہ ”مجھے اس کو گلے لگانا ہے۔“ کورونا کے خلاف جنگ میں ہم نے اپنی پیاری بہن کھو دی ہے، میں لوگوں سے کہوں گی کہ وہ لاک ڈاﺅن کی سختی سے پاسداری کریں تاکہ مزید لوگوں کو اپنے پیاروں کی جدائی کا صدمہ نہ سہنا پڑے۔“

مزید :

برطانیہ -