بیرونی سازش سے متعلق خط ہی مشکوک نکلا، حامد میر نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا

بیرونی سازش سے متعلق خط ہی مشکوک نکلا، حامد میر نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا
بیرونی سازش سے متعلق خط ہی مشکوک نکلا، حامد میر نے تہلکہ خیز دعویٰ کردیا
سورس: Screengrab

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) عمران خان کی جانب سے بیرونی سازش کے حوالے سے جس مبینہ خط کا دعویٰ کیا گیا تھا اس میں تبدیلیاں کیے جانےکا انکشاف ہوا ہے۔وزارت خارجہ کے ذرائع کے حوالے سے حامد میر نے روزنامہ جنگ کیلئے لکھا کہ   جس خط کو بین الاقوامی سازش کی بنیاد بنایا گیا ، جس کی بنیاد پر اسمبلی تحلیل کی گئی وہ خط اصلی نہیں، بلکہ  سفارت کار کے بھیجے گئے متن کو وزارت خارجہ میں دوبارہ تحریر کیا گیا، اس میں کچھ چیزیں شامل کی گئیں،کچھ الفاظ شامل کیےگئے ، اس میں جعلسازی کاعنصر بھی شامل ہے ، یہ وہ متن ہے ہی نہیں جو  سفارت کار  نے بھیجا تھا،  اب اگر تحقیقات ہوں گی تو نئے پہلو سامنے آئیں گے۔ 

 جیو نیوز کے مطابق    قومی اسمبلی کے اجلاس میں  ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 5 کے تحت کسی بھی غٖیر ملکی طاقت کے کہنے پر حکومت تبدیل نہیں کی جا سکتی لہذا اپوزیشن کی 8 مارچ کو وزیراعظم کے خلاف پیش کی گئی تحریک عدم اعتماد کو آئین سے انحراف قرار دیتے ہوئے اسے مسترد کر دیا جاتا ہے اور قومی اسمبلی کا اجلاس غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کیا جاتا ہے۔

بعد ازاں پارٹی رہنماؤں سے گفتگو میں عمران خان نے کہا کہ نیشنل سکیورٹی کمیٹی کا جو اجلاس ہوا اس میں آرمی چیف سمیت تمام سروسز چیفس تھے، جو پیغام ہمارےسفیر کو دیا گیا وہ سلامتی کمیٹی کی میٹنگ میں زیربحث آیا، سلامتی کمیٹی کی میٹنگ میں بتایا گیا کہ یہ بیرونی سازش ہے۔عمران خان نے کہا کہ جو لوٹے ہوئے ان سے سفارتخانے کے لوگ باقاعدہ ملتے تھے ان کا کیا کام؟ تحریک عدم اعتماد بیرون ملک کی سازش تھی یہ سارا ایک کنکشن تھا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -