سرکاری گاڑی میں سوار 15سالہ ڈرائیور کی کئی موٹر سائیکلوں اور گاڑیوں کو ٹکر

سرکاری گاڑی میں سوار 15سالہ ڈرائیور کی کئی موٹر سائیکلوں اور گاڑیوں کو ٹکر
سرکاری گاڑی میں سوار 15سالہ ڈرائیور کی کئی موٹر سائیکلوں اور گاڑیوں کو ٹکر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) کراچی میں کالے شیشوں والی سرکاری گاڑی نے کئی موٹرسائیکلوں کو ٹکر، گاڑیوں کو سائیڈ ماری، شہریوں نے 15 سالہ ڈرائیور کو پکڑوایا تو ٹریفک پولیس نے چھوڑ دیا۔

روزنامہ جنگ کے مطابق کراچی کی شارع فیصل پر کم عمر لڑکا  مخصوص نمبر والی کالے شیشوں والی گاڑی چلا رہا تھا، نمبر گاڑی کے آگے تھا اور پیچھے سے گاڑی کی نمبر پلیٹ ہی نہیں تھی۔ عبداللہ نامی 15 سالہ بچہ ڈرائیونگ کے دوران کئی موٹرسائیکلوں کو ٹکر مارتا رہا اور کئی گاڑیوں کو سائیڈ دے کر ہوٹر بجاتا گاڑی دوڑاتا رہا۔ موٹرسائیکل گرنے سے 2 افراد زخمی بھی ہوئے۔ 

مشتعل شہریوں نے لڑکے کو کسی طریقے سے قابو کیا تو ایک ٹریفک پولیس اہلکار نے اسے بھگانے کی کوشش کی، مشتعل شہریوں کے قانونی کارروائی کے اصرار پر مزید ٹریفک اہلکار طلب کر لئے گئے۔ ٹریفک پولیس افسر آیا تو پولیس چوکی لے جانے کا کہا جہاں با اثر سرکاری افراد آئے جنہیں ٹریفک پولیس اہلکاروں نے سلام کر کے لڑکا چھوڑ دیا۔ 

ٹریفک پولیس کی جانب سے کہا گیا کہ لڑکے کے خلاف چالان سمیت کوئی قانونی کارروائی نہیں کی گئی، واقعے کی مزید تفصیلات حاصل کر رہے ہیں۔