مہنگائی میں اضافے کی شرح 9.6فیصد رہی

مہنگائی میں اضافے کی شرح 9.6فیصد رہی
مہنگائی میں اضافے کی شرح 9.6فیصد رہی

  



کراچی(اے پی اے )جے ایس ریسرچ کے مطابق جولائی کے دوران مہنگائی میں اضافے کی شرح نو اعشاریہ چھ فیصد رہی ۔دسمبر دو ہزار کے بعد پہلی مرتبہ مہنگائی میں اضافے کی شرح دس فیصد سے کم ہوئی ہے۔ مالی سال کے پہلے مہینے میں مہنگائی میں اضافے کی شرح ڈھائی سال کی کم ترین سطح پر آنے کے باعث اسٹیٹ بینک اگلی مانیٹری پالیسی میں بنیادی شرح سود میں کمی کرسکتا ہے۔جے ایس ریسرچ کے مطابق مہنگائی کی شرح میں کمی اور امریکا کی طرف سے رکی ہوئی امداد کی بحالی کے بعد بنیادی شرح سود میں پچاس سے سو بیسیز پوائنٹس کی کمی کی جاسکتی ہے۔پاکستان انویسٹ منٹ بانڈ کی شرح منافع میں پچیس اور چھ ماہ کے ٹی بلز میں بیس بیسیز پوائنٹس کی نمایاں کمی بھی اسی طرف اشارہ کررہی ہیں۔ دوسری جانب رمضان میں اشیاءخوردونوش اور پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے رواں ماہ کے دوران مہنگائی ایک بار پھر دس فیصد سے تجاوز کرسکتی ہے۔ اس کے علاوہ مون سون میں کم بارشوں کے باعث پانی میں کمی سے پن بجلی کی پیداوار متاثر ہو گی جو بجلی کی قیمت میں اضافے کا باعث ہو سکتی ہے تاہم اس کے باوجود زیادہ تر اقتصادی ماہرین کا خیال ہے کہ موجودہ صورتحال میں دس اگست کو پالیسی ریٹ میں کمی کا امکان موجود ہے۔

مزید : بزنس


loading...