ایگزیمشن پر پابند ی سے منظور شد ہ رہائشی سکیموں میں ارا ضی کے جد ی مالکان کر ب کا شکار

ایگزیمشن پر پابند ی سے منظور شد ہ رہائشی سکیموں میں ارا ضی کے جد ی مالکان کر ب ...

لا ہور ( اقبا ل بھٹی ) ایل ڈی اے کی طر ف سے ایگزیمشن پر پابند ی کی بدولت منظور شد ہ رہائشی سکیموں میں ارا ضی کے جد ی مالکان سخت کر ب اور پر یشانی میں مبتلاہیں ،در جنوں سکیموں میں سینکڑو ں مالکان ایگزیمشن نہ ملنے کے با عث اپنی چھت کے حصول میں سر گرداں ہیں دوسری جا نب ایل ڈ ی اے نے تما م سکیمو ں کے پلاٹوں کانیلام عا م کر کہ ان کے زخمو ں پر نمک چھڑ ک د یا ہے ۔ تفصیلات کے مطا بق لاہور ڈ ویلپمنٹ اتھا رٹی کی ایک پالیسی ہے جس کے تحت ہر سکیم میں ما لکان اپنی زمین کے عوض پلاٹ حا صل کر تے ہیں جس کو عرف عا م میں ایگزیمشن کہاجا تا ہے ۔ مگر عر صہ درا زسے ایل ڈی اے نے تمام سکیموں کی ایگزیمشن بند کر ر کھی ہے جبکہ آکشن پلا ٹوں کی مہینہ میں دو با ر ہوتی ہے ۔ جس سے ایل ڈ ی اے کی ر ہائشی سکیموں میں پلاٹ ختم ہوجا ئیں گے اور زمین مالکان کوایگز یمشن نہیں مل سکے گئی۔جس وجہ سے ایل ڈی ائے کی سکیمیں جوہر ٹاؤن سبز ہ زا ر ،گجر پور ہاور موہنلوال سکیموں کے پلاٹ آکشن کئے جا ر ہے ہیں ،اس سے تو یو ں لگتا ہے کہ ان سکیموں میں پلاٹ برا ئے ایگزیمشن نہیں بچے گئے اور زمین کے جد ی مالکان اپنی چھت کے لئے تر سے ر ہ جائیں گئے جسے کہ فیصل ٹاؤن سکیم اور علامہ اقبا ل ٹاؤن سکیم کے جد ی مالکان کی فائلیں موجو د ہیں اور سکیم میں پلاٹ خالی کوئی نہیں ہے ۔لہذہ جو ہر ٹا ؤن سکیم ،سبزہ زار سکیم ،گجرپورہ اور موہنلوال سکیم،میں ابھی تک پلاٹ خالی ہیں کہ جد ی ما لکان کوپلا ٹوں کی ایگز یمشن دی جا سکتی ہے لیکن اگر کچھ عر صہ یہی حا ل ر ہا ایگزیمشن بند ر ہی اور کوئی نیا پلاٹ ایکوکیٹ نہیں کیا گیااوردوسری طر ف آکشن مہینہ میں دو با ر کی جا تی رہی ہے تو پھر ان سکیموں میں بھی پلاٹ ختم ہوجا ئیں گے اور ان سکیمو ں کے جد ی مالکان کے ہاتھ کچھ نہیں آ ئے گا ،اس لئے زمین مالکان نے وزیر اعلیٰ پنجا ب سے اپیل کی ہے کہ آکشن رو کی جا ئے اور ایگزیمشن کو کھولاجا ئے اور جد ی مالکان کوان کے پلاٹ ایگزیمنٹ کئے جا ئے تا کہ ان کی پر یشانی ختم ہوسکے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1