میڈیا کو احتیاط برتنی چاہیے،آرمی چیف کیخلاف کاروائی کی خبر تشویشناک اور مضحکہ خیز ہے ،چودھری نثار

میڈیا کو احتیاط برتنی چاہیے،آرمی چیف کیخلاف کاروائی کی خبر تشویشناک اور ...

اسلام آبا د (آن لائن ) وفاقی وزیرداخلہ چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کہ پاک فوج دنیا کی ایک منظم اور قانون پر عمل کرنے والی فورس ہے ۔ یہ خبر انتہائی تشویشناک اور مضحکہ خیز ہے کہ پاک فوج یا موجودہ چیف کے خلاف کوئی کارروائی عمل میں لائی جا رہی ہے ۔ آرمی چیف ایک پروفیشنل فوجی ہیں اور انہوں نے اپنی شبانہ روز محنت سے ڈیڑھ سال میں پوری دنیا میں عزت کمائی ہے ۔ آرمی چیف کو حکومت ،فوج اور پوری قوم کا اعتماد حاصل ہے یہ ممکن نہیں کے چند افسران ملکر آرمی چیف کو تبدیل کر لیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کے روز نادرا ہیڈکوارٹرز میں قومی شناختی کارڈ کے تجدید کے لیے �آن لائن درخواست فارم سسٹم کا افتتاح کرنے کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان اسوقت حالت جنگ میں ہے اس وقت ہمیں اپنی فوج کے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے موجدہ حالات میں فوج یا �آرمی چیف کیخلاف بے بنیاد خبریں اڑانے سے قبل میڈیا کو احتیاط کرنی چاہیے ، آرمی چیف کے خلاف خبریں پھیلاناملک کیلیے نقصان دہ ہے پاک فوج کی صلاحیتوں کی پوری دنیا تعریف کرتی ہے کہ پاک فوج دنیا کی منظم اور بہترین فورس ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کے ہمارا دشمن چھپا ہوا ہے اور چھپ کر وار کر رہا ہے ایسی کوئی خبر درست نہیں یہ صرف ہمارے دشمن کی خواہش ہو سکتی ہے کہ چند افسروں سے ملکر آرمی چیف کو ہٹا دیا جائے لیکن یہ ممکن نہیں ہے موجودہ آرمی چیف پر حکومت عوام اور فوج کو مکمل اعتماد ہے اور پوری قوم پاک فوج اور اسکے سربراہ کی پشت پر کھڑی ہے ۔چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت کی خواہش ہے نادرا ایک صاف اور شفاف ادارہ بنے اور کوشش ہے کے اس میں کوئی کام چور آدمی نہ ہو حکومت عوام کو قومی شناختی کارڈ کے حصول کے لیے سہولیات فراہم کرنے کے لیے کو شاں ہے قومی شناختی کارڈ کی تجدید کے لیے آن لائن فارم سے عوام کو سہولت ملے ہو گی اور لوگوں کو لائن میں کھڑے ہونے کی تکلیف برداشت نہیں کرنی پڑے گی ۔ حکومت نادرا اور پاسپورٹ میں ٹریکنگ سسٹم متعارف کروانے جارہی ہے لوگ گھر بیٹھے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ سے متعلق میسج کے زریعے معلومات حاصل کر سکیں گئے چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ شناختی کارڈ بنوانے والے کو بائیو میٹرک کروانا ہوگااس سے قبل ماضی میں ہزاروں کے حساب سے غیر ملکیوں کو جعلی شناختی خ کارڈ جاری کیے گئے ہم نے 2سال میں 92ہزار جعلی شناختی کارڈ بلاک کیے ۔ہم نادرا اور پاسپورٹ کو ادارہ بنانے کے لیے کوشاں ہیں ہم نے نادرا کو ماضی کی طرح بیت المال اور ہار خریدنے کے لیے نہیں استعمال کیا ۔

مزید : صفحہ اول